سندر انڈسٹریل اسٹیٹ میں اداروں اور کارخانوں کی تعداد 479ہو گئی

سندر انڈسٹریل اسٹیٹ میں اداروں اور کارخانوں کی تعداد 479ہو گئی

لاہور ( کامرس رپورٹر)پنجاب انڈسٹریل اسٹیٹس ڈویلپمنٹ اینڈ مینجمنٹ کمپنی (پیڈمک)کے قائمقام چیئرمین رضوان خالد بٹ نے کہا ہے کہ پنجاب انڈسٹریل اسٹیٹس ڈویلپمنٹ اینڈ مینجمنٹ کمپنی (پیڈمک) کے زیر انتظام سندر انڈسٹریل اسٹیٹ میں مختلف مصنوعات تیار کرنے والے اداروں اور کارخانوں کی تعداد 479تک پہنچ گئی ہے اور 392انڈسٹریل یونٹس پر تعمیراتی کام جاری ہے جبکہ 71کارخانے زیر تکمیل ہیں،یہ تعداد پاکستان میں کسی بھی انڈسٹریل اسٹیٹ میں قائم انڈسٹریل یونٹس کے مقابلہ میں زیادہ ہے۔وہ گزشتہ روز سندر انڈسٹریل اسٹیٹ میں کمرشل پلاٹوں کی شفاف طریقہ سے قرعہ اندای کی تقریب سے خطاب کر رہے تھے، تقریب پیڈمک کے سٹی آفس میں منعقد ہوئی۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ پانچ سالوں میں سندر انڈسٹریل اسٹیٹ میں بہتری کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ 2009میں سندراسٹیٹ میں 4فیصد کالونائزیشن ہوئی تھی جو 2015کے آخر میں 70فیصد تک پہنچ گئی اسی طرح 2009کے آخر میں سندر اسٹیٹ میں مزدوروں اور کارکنوں کی تعداد 31ہزارتھی۔ جو 2015میں بڑھ کر ایک لاکھ28ہزار 250ہوگئی۔

اس طرح پانچ سالوں میں روزگار میں اضافہ کی شرح میں303فیصد اضافہ ہوا۔ انہوں نے کہا کہ سندر انڈسٹریل اسٹیٹ میں دنیا کی بڑی ملٹی نیشنل کمپنیوں نے اپنے انڈسٹریل یونٹس لگائے ہیں اور انتہائی اطمینان بخش ماحول میں کام کر رہے ہیں جو کہ نہ صرف صوبہ پنجاب اور پاکستان کی قیادت بلکہ ملک کیلئے ایک قابل فخر بات ہے۔ انہوں نے بتایا کہ سندر انڈسٹریل اسٹیٹ میں لوڈ شیڈنگ نہیں ہوتی بلکہ لوڈ مینجمنٹ کے ذریعہ تمام پیداواری یونٹس اپنے شیڈول کے مطابق کام کر رہے ہیں جو پیڈمک کیلئے کسی اعزاز سے کم نہیں۔

مزید : کامرس