گندم خریداری کیلئے اہداف مقرر، سکیورٹی انتطامات بھی مکمل، کاشتکاروں کے تحفظات برقرار

گندم خریداری کیلئے اہداف مقرر، سکیورٹی انتطامات بھی مکمل، کاشتکاروں کے ...

خانیوال ‘ ٹھٹھہ صادق آباد ‘ ماچھیوال ‘ فقیر والی ‘ مٹھن کوٹ ‘ دھنوٹ ‘ منڈی یزمان ‘ مبارک پور ( نمائندگان ) جنوبی پنجاب بھر میں گندم  خریداری مہم کے حوالے سے پالیسی کا اعلان کرکے اہداف مقرر کر دئیے گئے ہیں ۔ سکیورٹی انتظامات بھی مکمل ہیں ‘ دوسری طرف باردانہ تقسیم کے حوالے سے کاشتکاروں کی شکایات بھی برقرار ہیں ‘ خانیوال سے نمائندہ پاکستان کے مطابق سال2016-17کے لئے ضلع خانیوال میں گندم خریداری کی پالیسی کا اعلان کردیاگیا ہے پالیسی کے مطابق کاشتکاروں کو باردانہ پہلے دس دن 50فیصد باردانہ جاری کیا جائے گا اس طرح5فیصد روزانہ باردانہ جاری ہوگا جبکہ اگلے دس دن 30فیصد اور آخری دس دن 20فیصد باردانہ جاری کیا جائے گا اس پالیسی میں یہ بھی واضع کیا گیا ہے کہ ایک دن میں ایک کاشتکار کو زیادہ سے زیادہ 200بوری باردانہ جاری کیا جائیگا جبکہ اس لیے زیادہ باردانہ کے حصول کی صورت میں 7دن انتظار کرنا پڑے کا سنٹر انچارج روزانہ کی بنیادپر باردانہ جاری کریگا جبکہ فی ایکڑ10بوری باردانہ جاری کیا جائے گا ۔ ضلع خانیوال میں سال 2016-17کے لئے14خریداری مراکز کے لئے ٹارگٹ مقرر کردیا گیا ہے ضلع بھر سے 1لاکھ85ہزار میٹرک ٹن گندم خریدی جائے گی جبکہ بی آر سنٹر خانیوال پر23ہزار،عبدالحکیم22ہزار، کچاکھوہ،14ہزار ،جہانیاں12ہزار،وجھیانوالہ 6ہزار، سلاروہن 12ہزار،کوٹ اسلام 12ہزار،کوٹ اسلام 12ہزار، بھٹہ کوٹ 12ہزار،مخدوم پور،12ہزار،جودھپور 12ہزار،سلیم چوک12ہزار،نیازی چوک 12ہزار، ٹھٹھہ صادق آباد12ہزار، اور سردار پور سنٹر پر 12ہزارمیٹرک ٹن کا ٹارگٹ مقرر کیا گیا ہے ۔ ضلع خانیوال مںی سال2016-17میں1لاکھ85ہزار میٹرک ٹن گندم خریدنے کے لئے 532100جیوٹ بیگ اور1318800پولی پراپلین بیگ درکار ہوں گے اس میں سے 310953جیوٹ بیگ ،147366پولی پراپلین بیگ موجود ہیں جبکہ ضلع خانیوال میں مزید 220247،جیوٹ بیگ اور1171434پولی پرایلین بیگ درکار ہیں۔ ڈسٹرکٹ فوڈ کنٹرولر ملک ممتاز احمد کے مطابق ان کمیٹیاں اور ضلعی ا نتظامیہ کے تعاون سے خریداری مہم کو کامیاب بنایا جائیگا ۔ ٹھٹھہ صادق آباد سے نمائندہ پاکستان کے مطابق ڈسٹرکٹ فوڈ کنٹرولر خانیوال ملک ممتاز وینس نے بتایا کہ امسال ضلع خانیوال میں ایک لاکھ 85ہزار میٹرک ٹن گندم کی خریداری کا حدف مقر ر کیا گیا ہے ،اس سال فی 40کلو گرام گندم کا ریٹ 1300روپے مقرر کیاگیا ہے ،باردانہ کی فراہم گندم خریداری کے لیے ضلع خانیوال میں 14گندم خریداری مراکز خانیوال ، کچاکھوہ ،چک نمبر 65/15-L، نیاز ی چوک ، مخدوم پور ، عبدالحکیم، جوھ پ پور،سردار پور، کوٹ اسلام ،سلارواہن، بٹہ کوٹ ،سلیم چوک ،جہانیاں، ٹھٹھہ صادق آباد میں قائم کئے گئے ہیں،جہاں کسانوں کو 25اپریل سے فی ایکٹر 10بوری باردانہ کی فراہمی شروع کردی جائے گی، 14فوڈ سنٹروں پرفوڈ عملہ بھی تعینات کردیا گیا ہے ۔دریں اثناء ڈسٹرکٹ پویس آفیسرخانیوال جہانزیب نذیر کی طرف سے ضلع خانیوال کے تمام پولیس سرکلز کے ایس ڈی پی اوز، 18تھانوں کے ایس ایچ اوز ،کو ضلع خانیوال کے 14گندم خریداری مراکز پر گندم خریداری مہم کے دوران پولیس سکیورٹی اور حفاظتی انتظامات کرنے کے لئے مراسلہ جاری کیا گیا ہے،جس کے مطابق تمام تھانوں کے ایس ایچ اوز کو اپنے تھانوں کے حدود میں قائم گندم خریداری مراکز پر پولیس اہلکار تعینات کرتے ہوئے فوڈ سنٹروں پر امن وامان کی صورتحال ،کسانوں کے جان ومال کے تحفظ اور سرکاری املاک کی حفاظت کو یقینی بنانے کے احکاما ت جاری کرتے ہوئے سختی سے عملدر آمد کروانے کا حکم دیا گیا ہے۔ ماچھیوال سے نامہ نگار کے مطابق باردانہ کی تقسیم کا عمل 25اپریل سے شروع کر دیا جائے گا ،پہلے پانچ روز ساڑھے بارہ ایکٹر سے کم رقبے والے زمینداروں کو باردانہ فراہم کیا جائے گا جس کے تمام تر انظامات بالکل مکمل کر لیئے گئے ہیں اور تمام چکوک کی لسٹیں سنٹر پر آویذاں کر دی گئیں ہیں تاکہ ہر کاشتکار بمطابق رقبہ اپنا CDR بنوا سکیں اور پہلے آیئے پہلے پا ئیے کی سہولت سے بھر پور فائدہ اٹھا سکیں ان خیالات کا اظہار فوڈ سنٹر کے انچارج چوہدری یامین نے مقامی صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے کیا ۔فقیر والی سے نمائندہ خصوصی کے مطابق چئیرمین سید صابر حسین شاہ وائس چئیرمین شہباز رشید نے کسانوں کی نمائندگی کرتے ہوئے میڈیا کو بتایا کہ جعلی خسرہ گرداوریاں پٹواریوں کی ملی بھگت سے ہو رہی ہیں جس کی وجہ چھوٹے زمینداروں کو باردانہ نہ مل سکا اوربڑے مگر مچھوں کی گندم خرید کا سلسلہ عروج پر ہے‘ ان پٹواریوں کا احتساب کیا جائے اور خوراک سنٹر پر باردانے کی تقسیم میرٹ پرکی جائے ۔ مٹھن کوٹ سے نامہ نگار کے مطابق مرکز خرید گندم مٹھن کوٹ کے انچارج ارشد محمود قریشی نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ مرکز پر کاشتکاروں اور زمینداروں سے1300 روپے فی40 کلو گرام کے حساب سے گندم خریدی جائے گی اس کے علاوہ کاشتکاروں اور زمینداروں کو9 روپے بوری کے حساب سے کیرج چارجز بھی دئے جائیں گے باردانہ کے حصول کے لئے ضلع راجن پور کے کسا نوں کی فہرستیں آویزاں کر دی گئیں ہیں فہرست میں اگر کسی کاشتکار یازمیندار کا نام رہ گیا ہو تو وہ فوری طور پر متعلقہ اے سی صاحبان سے رابطہ کریں انہوں نے مزید بتایا کہ گندم کی خرید کا عمل یکم مئی سے شروع کیا جائے گا۔ دھنوٹ سے نمائندہ خصوصی کے مطابق ناقص حکومتی حکمت عملی کے باعث گندم کی خریداری تاحال شروع نہ ہو سکی،جسکی وجہ سے کاشتکار اپنی گندم 1020روپے من اونے پونے داموں فروخت کرنے پر مجبور ہیں اور منافع کمانے کے لیے مڈل مین اور بیووپاروں نے پاسکو عملے سے باردانہ حاصل کر نے کے لیے اپنے رابطے تیز کردیے ہیں ،کاشتکاروں نے گندم خریداری نہ ہونے پر شدید احتجاج کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ پنجاب سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔ منڈی یزمان سے نامہ نگار کے مطابق تحصیل یزمان میں 7گندم خریداری مرکز قا ئم کر دئیے گئے ہیں۔ یزمان خریداری سنٹر کو 1لاکھ 20ہزار بوری گندم خرید کا ہدف دیا گیا ہے۔ جبکہ تحصیل بھر میں 6لاکھ 90ہزار بوری گندم خرید کی جائے گی۔ انچارج خریداری سنٹر یزمان رضوان اللہ وڑائچ نے کہا کہ ماہ رواں کی 25تاریخ سے با ردانہ چلت کا آغاز کیا جائے گا۔ جو ایک ماہ تک جاری رہے گا۔ پہلے 5دن صرف ساڑھے بارہ ایکڑ یا اس سے کم اراضی کاشت کاروں کو ہی بار دانہ چلت کیا جائے گا۔ جسکی فہرستیں سے خریداری سنٹر ٹی ایم اے آفس اور اے سی آفس میں آویزاں کر دی گئی ہیں۔ اہوں نے کہا کہ تحصیل یزمان میں یزمان ،کڈوالہ بنگلہ ،51ڈی بی ، ٹیل والہ ،ہیڈ راجکاں ،شاہی والہ اور جھوک پنوار خریداری سنٹر بنائے گئے ہیں۔ ہر خریداری سنٹر پر دیہ نمبردار ،نمائندہ کاشت کار ،نمائندہ ایم پی اے ،سینٹر انچارچ اور سنٹر کوآرڈینیٹر پانچ افراد پر مشتمل ایک مصالحتی کمیٹی بنا دی گئی ہے۔ جو خریداری سنٹر پر گندم خریداری کے حوالے سے کسی اختلاف کی صورت میں اپنا کردار ادا کرے گی۔ مبارک پور سے نامہ نگار کے مطابق مبارک پور کسان بورڈ کے ممبر ملک محمد ابراہیم آرائیں نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ حکومت کی طرف سے کئے گئے اعلانات واخباروں میں اشتہارات پر اعتماد کر کے کسانوں نے اپنی گندم کی کٹائی کے بعد گہائی کرکے فوڈ سنٹر پر خریداری کا اعلان سننے کا انتظار کر کرکے بیو پاریوں کو سستے داموں گندم فروخت کر نے پر مجبور ہوگئے ہیں ،فوڈ سنٹر پر پہلے خریداری 15اپریل کی پیشنگوئی تھی اس کے بعد 20اپریل اب بھی کوئی خبر نہیں کب خریداری شروع ہوگی ۔ انہوں نے حکومت پنجاب فوری گندم خریداری کا مطالبہ کیا ہے ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر