پنجا ب دیہی سپورٹ پروگرام کے ملازمین کا احتجاج اور دھرنا

پنجا ب دیہی سپورٹ پروگرام کے ملازمین کا احتجاج اور دھرنا

لاہور( خبر نگار ) پنجا ب دیہی سپورٹ پروگرام کے تحت کا م کرنے والے ملازمین نے 14 اضلاع میں802 ڈاکٹروں سمیت 5500ملازمین کی بحالی کے لیے لاہو رپریس کلب سے وزیر اعلی پنجا ب سیکریٹریٹ تک احتجاج جاری رکھا ،محکمہ صحت کے سا تھ مذاکرات کا میاب نہ ہو سکے۔ مظاہرین کا کہنا ہے کہ جب تک ہمیں مستقل بحال نہیں کیا جاتا احتجا ج جاری رکھیں گے۔ ڈاکٹر چاند ،ڈاکٹر گلزار اور ڈاکٹر شہباز نے کہا ہے کہ ایڈیشنل سیکریٹری ہیلتھ عدنان ظفر اور سی سی پی او لاہور ہمیں محض دھوکہ دینے کے لیے کہہ رہے ہیں ہم ایک ہفتہ میں آپ لوگوں کو بتا دیں گے کہ تمام ملازمین کو کب مستقل کیا جا رہا ہے۔اس حولے سے ان کا مزید کہنا تھا کہ 802 ڈاکٹروں،572 لیڈی ہیلتھ ورکروں اور 1100ڈسپنسروں سمیت 55سو ملازمین کو بے روزگار کیا جا رہاہے ان کی جگہ نئے لوگ بھرتی کرنے کا سلسلہ شروع کر دیا گیا ہے۔پنجا ب حکومت نے ای ڈی اوز سے نہ چلنے والے 14اضلا ع کے ویران ہسپتال 2004 میں پی آر ایس پی کے حوالے کیے اور اس پروگرام کا نام وزیر اعلیٰ پروگرام برائے بنیا دی صحت رکھاتھا۔مظاہرین کا کہنا تھا کہ حکومتی عہدیدار نئی بھرتیوں کے ذریعے پیسہ بنا نے کے چکر میں ہیں اور ہمیں گھر بھیجا جا رہا ہے۔ مظاہرین مذاکرات ناکام ہونے کے بعد رات گئے تک کلب روڑ کے باہر احتجاج جاری رکھے ہوئے تھے کہ پولیس نے ان کے 8کے قریب رہنماؤں کو گرفتار کرلیا جس بعد رات گئے تک مظاہرین نے مال روڈ کلب بند کرکے مستقل دھرنا دے دیا۔

مزید : صفحہ آخر