احتساب کیلئے سیاستدانوں کو آئین پر عمل ، کوئی جرنیل مارشل لاء نہیں لگا سکتا، جاوید ہاشمی

احتساب کیلئے سیاستدانوں کو آئین پر عمل ، کوئی جرنیل مارشل لاء نہیں لگا سکتا، ...

ملتان( سٹاف رپورٹر)سینئر سیاستدان مخدوم جاوید ہاشمی نے کہا ہے کہ جنرل راحیل شریف سمیت کوئی بھی جرنیل احتساب نہیں کر سکتا اور نہ ہی کوئی مارشل لا نافذ کر سکتا ہے‘احتساب سب کا ہونا چاہئیے لیکن سیاستدانوں اور منتخب ارکان کو آئین پر عمل کرنا ہوگا‘جنوبی پنجاب سمیت جتنے زیادہ صوبے بنیں گے ‘اتنے مسائل جلد حل ہونگے‘وہ مسلم لیگ کے رہنما اللہ نواز درانی کے زیر اہتمام آل پارٹیز کانفرنس میں صدارتی خطاب کر رہے تھے‘تاجر رہنما خواجہ شفیق ‘بریگیڈیئر (ر) مسعود قریشی‘خواجہ محمد یوسف‘ خالد حنیف لودھی‘ ندیم قریشی‘ ظفر قادری ایڈووکیٹ‘مخدوم زاہد ہاشمی‘خالد محمود قریشی‘غلام مصطفیٰ‘شجاع خان علیزئی اور دیگر رہنماؤں نے بھی خطاب کیا‘مخدوم جاوید ہاشمی نے مزید کہا کہ ملک کے حالات اتنے مایوس کن نہیں ہیں جتنے کہا جارہا ہے‘افسوسناک امر ہے کہ کسی بھی دور میں آئین پر عمل ہی نہیں کیا گیا‘ذوالفقارعلی بھٹو نے یقیناًملک کو متفقہ آئین دیا لیکن اس پر عملدرآمد نہ ہو سکا اور بنیادی حقوق معطل کرکے ایمرجنسی لگا دی گئی‘اس سلسلے میں ذوالفقار علی بھٹو کی خدمات مسلمہ ہیں لیکن جب ضیاالحق نے اقتدار سنبھالا تو انہوں نے اسے کاغذ کا ٹکڑا کہا اور میاں نواز شریف کی اگرچہ یہ خواہش رہی ہے کہ وہ آئین پر عمل کریں لیکن اگر آج بھی آئین پر عملدرآمد شروع ہو جائے توخوف کے سائے ختم ہو سکتے ہیں‘ چھوٹو گینگ کا معاملہ ایک ایس ایچ او اور کانسٹیبل حل کر سکتے تھے لیکن اسے اس قدر بڑھایا گیا کہ سیاستدان ناکام رہے جس کی وجہ آئین پر عملدر آمد نہ ہونا ہے‘انہوں نے مزید کہا کہ جنرل راحیل شریف کو یقیناًملک سے محبت ہے اور وہ ہر مشکل گھڑ ی میں سپاہی کی طرح کام کرتے ہیں ‘ایوب خان ‘یحیٰ خان‘ضیاالحق اور مشرف احتساب کی بات کرتے رہے لیکن احتساب نہیں کر سکے ‘ ‘انہوں نے کہا کہ گزشتہ تین چار سالوں میں پاکستان کی سیاسی قیادت اور پارلیمنٹ نے مایوس کیا اور ہم نے ماضی کی غلطیوں سے سبق نہیں سیکھا‘گزشتہ 4دنوں میں نیب نے4لٹیروں کو معاف کیا‘نواز شریف پر پانامہ لیکس کا الزام عائد ہوتا ہے تو انہیں اس کا سامنا کرناچاہئیے البتہ رحمان ملک کا یہ بیان سن کر قوم ہنسی کے سوا کچھ اور نہیں کہہ رہی کہ جو کوئی کرپشن میں ملوث ہے ‘اسے جواب دینا ہوگا‘انہوں نے کہا کہ دبئی اور لندن میں سارے سیاستدان ایک محلے میں رہتے ہیں اور ایک دوسرے کو جانتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ اگر اڑھائی سو ارب ڈالر ملک میں واپس آجائیں تو ملک بجلی ‘گیس اور دیگر بحرانوں سے نکل سکتا ہے‘انہو ں نے کہا کہ ملتان آج بھی بحرانوں میں گھرا ہوا ہے‘جتنے صوبے زیادہ ہوں گے ‘مسائل اس قدر جلد حل ہو ں گے ۔جاوید ہاشمی نے تجویز دی کہ ملتان میں آل پارٹیز کی سطح پر ایک فورم تشکیل دیا جائے جو عوام کے مسائل کے حل میں سود مند ثابت ہوگا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ اول