پی ٹی آئی کے ایف نائن پارک جلسہ بارے درخواست پر فیصلہ محفوظ

پی ٹی آئی کے ایف نائن پارک جلسہ بارے درخواست پر فیصلہ محفوظ

اسلام آباد (کرائم رپورٹر) پاکستان تحریک انصاف کے یوم تاسیس کے موقع پر ایف نائن پارک میں جلسہ کرنے کی اجازت دینے کے حوالے سے درخواست پر اسلام آباد ہائی کورٹ نے فیصلہ محفوظ کر لیا ہے۔ پی ٹی آئی کے یوم تاسیس کے موقع پر 24 اپریل کو ایف نائن پارک میں انتظامیہ کی طرف سے اجازت دینے کے حوالے سے دائر درخواست کی سماعت عدالت عالیہ کے جسٹس عامر فاروق نے کی۔ شہری وحید محمود خان کی جانب سے یاسر محمود چوہدری ایڈووکیٹ پیش ہوئے اور موقف اپنایا کہ تفریحی مقامات کو سیاسی مقاصد کے لئے استعمال نہیں کیا جا سکتا۔ ایف نائن پارک شہریوں کی تفریح کے لئے بنایا گیا ،اگر تفریحی مقامات پر جلسے جلوس کی اجازت ملتی رہی تو یہ سیاسی مقامات بن جائیں گے۔ ایف نائن پارک میں روزانہ کی بنیاد پر خواتین سمیت بچے ، بڑے اور بوڑھے تفریح کے لئے آتے ہیں۔ ماضی میں ڈی چوک پر ہونے والوں دھرنوں سے شہری پہلے ہی ذہنی طور پر پریشان رہے۔ لہٰذا 24 اپریل کو ایف نائن پارک میں تحریک انصاف کے جلسے کو روکا جائے اور شہر سے باہر اس جلسے کو منعقد کرنے کی ہدایت کی جائے تا کہ شہریوں کو پریشانی کا سامنا نہ کرنا پڑے۔ اس پر جسٹس عامر فاروق نے ان سے استفسار کیا کہ کیا آپ کے پاس اجازت نامے کی کاپی موجود ہے تو درخواست گزار کے وکیل نے بعض اخباری تراشے پیش کئے جس پر فاضل جسٹس نے ریمارکس دئیے کہ اجازت نامہ کی کاپی کی غیر موجودگی میں کس طرح عدالت نوٹس جاری کر سکتی ہے؟ بعد ازاں فاضل عدالت نے درخواست پر فیصلہ محفوظ کر لیا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر