بھارت میں پاکستانیوں کے غیرقانونی جگر ٹرانسپلانٹ مقدمے کی تحقیقات دوبارہ شروع

بھارت میں پاکستانیوں کے غیرقانونی جگر ٹرانسپلانٹ مقدمے کی تحقیقات دوبارہ ...

اسلام آباد (کرائم رپورٹر)ایف آئی اے نے بھارت میں ہاکستانیوں کے غیر قانونی جگر ٹرانسپلانٹ کرنے کی مقدمے کی تحقیقات دوبارہ شروع کر دی، ایف آئی اے حکام ایف آئی آے اسلام آباد نے مارچ میں مقدمہ درج کرکے دو افراد کو گرفتار کیا تھا ، ایف آئی اے حکام کے مطابق ر اولپنڈی کے دبئی پلازہ میں نجی دفتر میں عرصہ دراز سے جگر کے غیر قانونی ٹرانسپلانٹ کیلئے سادہ لوح لوگوں کو پھنسایا جارہا تھا ،کراؤن ویلتھ کنسلٹنٹ کے نام سے ادارے کے افراد نے مبینہ طورپر اب تک درجنوں افراد کے جگر بھارت میں فروخت کئے،سادہ لوح لوگوں کو چند ہزار روپے دئیے جاتے تھے جبکہ خریداروں سے بیس سے پچیس لاکھ وصول کئے جاتے تھے ایف آئی آے کے سابقہ حکام نے انسانی سمگلنگ کا مقدمہ درج کرکے اصل معاملے تک کیس کو نہیں پہنچایاڈائریکٹر ایف آئی آے نے کیس کو انسانی عضا کی غیر قانونی فروخت کرنے کے حوالے سے دوبارہ تحقیقات کرنے کا حکم دے دیا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر