بھارت نے سمندری ایٹمی دوڑ کا آغاز کر دیا، مذاکرات کیلئے تیار ہیں: پاکستان

بھارت نے سمندری ایٹمی دوڑ کا آغاز کر دیا، مذاکرات کیلئے تیار ہیں: پاکستان
بھارت نے سمندری ایٹمی دوڑ کا آغاز کر دیا، مذاکرات کیلئے تیار ہیں: پاکستان

  

اسلام آباد (ویب ڈیسک) ترجمان دفتر خارجہ نفیس ذکریا نے کہا ہے بھارت کی جانب سے ایٹمی وار ہیڈ لے جانے والے میزائل کے تجربے سے خطے میں امن کے قیام اور خطے میں توازن خراب ہونے کا خدشہ ہے ۔ بھارتی خفیہ ایجنسی ’را‘ کے ایجنٹ کی گرفتاری سے پاکستان کا اقوام متحدہ اور امریکہ کو دیئے گئے ڈوزیئرز کی تصدیق کر دی کہ پاکستان میں بھارتی مداخلت موجو د ہے۔ ہفتہ وار میڈیا بریفنگ دیتے ہوئے ترجمان نے کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان میزائل ٹیسٹ کا معاہدہ موجو دہے دونوں ممالک تجربے سے قبل ایک دوسرے کو اطلاع دینے کے پابند ہیں۔ ترجمان دفتر خارجہ نے کہا ہے بھارت نے ایٹمی دوڑ کا آغاز کر دیا ۔ پیشگی اطلاع نہ دینے پر کوئی بھی پڑوسی ملک اسے اپنے اوپر حملہ تصور کر سکتا ہے، پیشگی اطلاع نہ دینے پر سخت تشویش ہے ۔ ترجمان نے کہا پاکستان کا ایٹمی پروگرام بین الاقوامی قوانین کے مطابق ہے اور متعدد مرتبہ بین الاقوامی دنیا پاکستان کے ایٹمی پروگرام کے نظام کو بہترین قرار دے چکی ہے۔ بھارتی ایجنٹ سے مزید تفتیش کا عمل جاری ہے۔ پاکستان بھارتی مداخلت کا معاملہ بین الاقوامی فورم پر اٹھائے گا۔ چار ملکی گروپ افغانستان میں امن کے قیام کیلئے مشترکہ کوششیں جاری رکھے گا۔ ترجمان نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں پر سخت تشویش ہے ۔ بھارت پاکستان میں غیر قانونی سرگرمیوں میں ملوث ہے اس کے باوجود ہم ہر وقت پڑوسی ممالک کے ساتھ اچھے تعلقات چاہتا ہے ۔مذاکرات میں تمام تنازعات پر گفتگو ہونی چاہیے۔

مزید : اسلام آباد