سپاٹ فکسنگ میں ملوث ہونے کی سزا،محمد عامر کو دورہ انگلینڈ کے لئے ویزہ جاری نہ ہونے کا خدشہ

سپاٹ فکسنگ میں ملوث ہونے کی سزا،محمد عامر کو دورہ انگلینڈ کے لئے ویزہ جاری نہ ...
سپاٹ فکسنگ میں ملوث ہونے کی سزا،محمد عامر کو دورہ انگلینڈ کے لئے ویزہ جاری نہ ہونے کا خدشہ

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)خدشہ ہے کہ قومی کرکٹ ٹیم کے باﺅلر محمد عامر کو دورہ انگلینڈ کے لئے ویزہ جاری نہ سکے گا۔ ایکسپریس ٹریبون کے مطابق محمد عامر کو انگلینڈ کے خلاف ٹیسٹ میچ کے دوران سپاٹ فکسنگ میں ملوث ہونے پر پانچ سال کے لئے انٹرنیشنل کرکٹ سے دوری کی سزا کا سامنا کرنا پڑا ۔

قومی کرکٹ ٹیم کی ورلڈ ٹی20میں ناقص کاکردگی،سینیٹ میں تحریک التوا بحث کیلئے منظور

اگرچہ سپاٹ فکسنگ کے جرم میں لگی پابندی ہٹنے کے بعد پاکستان کرکٹ ٹیم میں محمد عامر کی شمولیت ہو گئی ہے اور انہوں نے ورلڈ ٹی 20ورلڈکپ 2016میں اپنی صلاحیتوں کا بھر پور لوہا منوایا اور قومی ٹیم کا ایک اہم حصہ بن گئے ہیں۔

بھارتی اور ویسٹ انڈین کرکٹ بورڈز کا12سال پرانا تنازع ختم ہو گیا

برطانوی امیگریشن وکلا ءنے ڈیلی ٹیلیگراف سے بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ” محمد عامر کاکیس اس بات پر منحصر ہے کہ کہیں ان کا انگلینڈ داخلہ عوامی حقوق کے منافی تو نہیں“۔انہوں نے مزید کہا کہ ”فیصلہ کا اختیار اس امیگریشن آفیسر کے ہاتھ میں ہے جو محمد عامر کے ویزہ کی جانچ پڑتال کرے گا “۔یاد رہے کہ رواں سال ماہ جنوری میں بھی محمد عامر کو دورہ نیوزی لینڈ کے لئے بھی ویزہ مسائل کا سامنا کرنا پڑا تھا تاہم پاکستان اور نیوزی لینڈ کے کرکٹ بورڈ ز کی حمایت کے بعد کیوی امیگریشن حکام نے عامر کو ملک داخلے کی اجازت دے دی تھی ۔

مزید : کھیل