ماتحت عدالتوں میں فلٹریشن پلانٹ خراب،سائلین گرم پانی پینے پر مجبور

ماتحت عدالتوں میں فلٹریشن پلانٹ خراب،سائلین گرم پانی پینے پر مجبور

  

لاہور(نامہ نگار)سیشن کورٹ اور جوڈیشل کمپلیکس فیزٹو میں سائلین سخت گرمی میں فلٹریشن پلانٹ خراب ہونے کے باعث "گرم پانی "پینے پر مجبور ہوگئے جبکہ پانی کی سہولت نہ ہونے کی وجہ سے وکلا نے اپنے گھروں سے واٹر کولر لانا شروع کردیئے ہیں ،شدید گرمی میں ٹھندے پانی کی سہولت نہ ہونے سے شہری شدید مشکلات کا شکار ہوگئے ہیں،اس موقع پر مافیا بھی سرگرم ہوگیا اورمنرل واٹر کے نام پر ناقص پانی کی بوتلیں فروخت کرنے لگا ہے سیشن کورٹ اور جوڈیشل کمپلیکس فیز ٹو میں سائلین کو پینے کا پانی نہ ملنے سے سخت پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے سیشن کورٹ میں ایک فلٹریشن پلانٹ لگا ہوا ہے لیکن اس کی صفائی نہ ہونے کی وجہ سے پلانٹ گرم پانی دے رہا ہے ،پانی نہ ملنے کا فائدہ پانی فروخت کرنے والا مافیا اٹھا رہا ہے۔پانی کی ایک بوتل 40روپے جبکہ ڈیرھ لیٹر کی بوتل 60سے 65روپے میں فروخت کی جا رہی ہے جبکہ سیشن کورٹ میں مشروبات کے سٹال پر الگ سے لوٹ مار جاری ہے ،دکاندار سائلین سے اپنی مرضی کے پیسے وصول کرتا ہے،سائلین نے انتظامیہ سے فوری اس مسئلہ کے حل کی اپیل کی ہے ۔

مزید :

علاقائی -