ٹیکسوں کی وصولی میں 60 فیصد اضافہ نمایاں کامیابی ہے ،اسحاق ڈار

ٹیکسوں کی وصولی میں 60 فیصد اضافہ نمایاں کامیابی ہے ،اسحاق ڈار

  

واشنگٹن (اظہر زمان، بیورو چیف) پاکستان کی معیشت میں ایک زبردست تبدیلی دیکھنے میں ائی ہے اور اس کا شمار خطے میں تیز ترین رفتار سے فروغ پانے والی ایسی معیشتوں میں ہو رہا ہے جہاں سرمایہ کاری کے لاتعداد مواقع موجود ہیں۔ یہ جائزہ پاکستان کے خزانہ اور اقتصادی امور کے وفاقی وزیر سینیٹر محمد اسحاق ڈار نے یہاں ’’ہیریٹج فاؤنڈیشن‘‘ سے اپنے کلیدی خطاب میں پیش کیا جس کا موضوع تھا ’’پاکستان کی اقتصادی اصطلاحات: اس کی سرمایہ کاری کیلئے کوششیں اور ترقی و سماجی تبدیلی کے امکانات‘‘۔ انہوں نے اپنی حکومت کاموقف پیش کرتے ہوئے بتایا کہ 2013ء میں اقتدار سنبھالنے کے فوراً بعد ہم نے بیمار معیشت کو سہارا دینے کیلئے ٹھوس کوششوں کا آغاز کردیا تھا۔ تب سے اب تک حکومت توانائی، معیشت، تعلیم، صحت اور سوشل سیکٹر کے تمام شعبوں کے علاوہ انتہا پسندی کے خاتمے پر خصوصی توجہ دے رہی ہے۔ اس دوران جو اصلاحات کی گئیں ان میں بغیر ٹارگٹ والی سبسڈی میں کمی، ٹیکس کی بنیاد میں توسیع، غیر ملکی زرمبادلہ کے ذخائر میں اضافہ اور افراط زر کی شرح میں کمی شامل تھیں۔ وفاقی وزیر خزانہ نے دعویٰ کیا کہ گزشتہ تین برس میں ٹیکسوں کی وصولی میں ساٹھ فیصد اضافہ ہوا ہے جو گزشتہ دور کے مقابلے میں ایک نمایاں کامیابی ہے۔ انہوں نے بتایاکہ پاکستان پہلی مرتبہ آئی ایم ایف کے توسیعی فنڈ کی سہولت کے پروگرام پر عملدرآمد کر رہا ہے۔ پاکستان کی ریٹنگ بھی بین الاقوامی سطح پر بڑھ رہی ہے۔ سی پیک کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس سے نہ صرف پاکستان میں بلکہ پورے خطے میں مکمل تبدیلی آ جائے گی۔

مزید :

صفحہ آخر -