لگژری ٹیکس کے خلاف درخواست،سیکرٹری ایکسائز کو جواب داخل کرانیکا حکم

لگژری ٹیکس کے خلاف درخواست،سیکرٹری ایکسائز کو جواب داخل کرانیکا حکم

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے لگژری ٹیکس کے خلاف درخواست پر سیکرٹری ایکسائز کو 2 ہفتوں میں جواب داخل کرانے کا حکم دے دیا ہے ، جسٹس شمس محمود مرزا نے واپڈا ٹاؤن کی صبور رضوی کی درخواست پر سماعت کی، درخواست گزار کی طرف سے موقف اختیار کیا گیا کہ محکمہ ایکسائز نے دو کنال اور اس سے بڑے گھروں پر لگژری ٹیکس لگایا ہے، پہلے سے پراپرٹی ٹیکس دینے والوں پر لگڑری ٹیکس نہیں لگایا جا سکتا ،لگژری ٹیکس کے نوٹسز کو کالعدم کیا جائے۔علاوہ ازیں لاہور ہائیکورٹ نے بجلی کا زائد بل بھجوانے پر ایکسیئن لیسکو ویسٹ ڈی ایچ اے کو نوٹس جاری کرتے ہوئے دو ہفتوں میں جواب طلب کر لیا ہے، جسٹس شمس محمود مرزا نے حامد حسن کی درخواست پر سماعت کی، درخواست گزار کی طرف سے موقف اختیار کیا گیا کہ ڈی ایچ اے ویسٹ لیسکو نے بجلی کا زائد بل بھجوا دیا ہے ،لیسکو کو بل کی درستگی کا حکم دیا جائے۔ایک دوسرے کیس میں لاہور ہائیکورٹ نے خاتون کو متبادل پلاٹ نہ دینے پر ڈی جی ایل ڈی اے سے 7مئی تک جواب طلب کر لیاہے، جسٹس شمس محمود مرزا نے عابدہ خانم کی درخواست پر سماعت کی، درخواست گزار کی طرف سے موقف اختیار کیا گیا کہ ایل ڈی اے نے جوہر ٹاؤن میں 1984 ء میں ایک کنال 13 مرلے جگہ ایکوائر کی اور ایل ڈی اے 30 برس گزرنے کے بعد بھی متبادل پلاٹ نہیں دے رہا، ایل ڈٰی اے کو متبادل پلاٹ دینے کا حکم دیا جائے

مزید :

صفحہ آخر -