سپاٹ فکسنگ شاہ زیب پر فرد جرم عائد

سپاٹ فکسنگ شاہ زیب پر فرد جرم عائد

  

لاہور ( این این آئی) اینٹی کرپشن ٹربیونل نے سپاٹ فکسنگ کیس کی سماعت کے دوران شاہ زیب حسن پر پاکستان کرکٹ بورڈ اینٹی کرپشن کوڈ کی خلاف ورزی پر فرد جرم عائدکردی ۔پریس ریلیز کے مطابق نیشنل کرکٹ اکیڈمی لاہور میں اینٹی کرپشن ٹریبونل نے اسپاٹ فکسنگ کیس کی ابتدائی سماعت کی جس میں شاہ زیب حسن پر پاکستان سپر لیگ کے دوران بکیز کے رابطہ کرنے پر پی سی بی کو آگاہ نہ کرنے پرپی سی بی اینٹی کرپشن کوڈ کے آرٹیکل2.1.4، 2.4.4 اور 2.4.5کی خلاف ورزی پر فرد جرم عائدکر دی گئی۔سماعت کے دوران کمیٹی کے چیئرمین جسٹس اصغر حیدر، کمیٹی کے ممبران لیفٹیننٹ جنرل (ر) توقیر ضیا ء اور وسیم باری بھی موجود تھے، جبکہ شاہ زیب حسن اور ان کے وکیل بیرسٹر ملک کاشف رنجوانا ‘ پی سی بی کے ویجیلینس اور سکیورٹی ڈیپارٹمنٹ کے سربراہ کرنل (ر) محمد اعظم خان ،پی سی بی کے وکلاء تفضل رضوی اور حیدر رضوی بھی موجود تھے۔ٹربیونل دونوں فریقین سے مشاورت کے بعد اینٹی کرپشن کوڈ کے تحت کیس کے وقت اور طریقہ کار پر رضا مند ہوا ۔تاہم پی سی بی ابتدائی تفصیلات اور شواہد کیساتھ موجود دعوؤں کو 4مئی کو ٹریبونل میں جمع کرائے گا۔ شاہ زیب حسن کو 18مئی تک اپنے جوابات داخل کرانے کا موقع دیا جائے گا، جس کے بعد پی سی بی کو 25مئی تک اپنی صوابدید پر جواب جمع کرانے کی اجازت ہوگی۔ دونوں فریقین کی جانب سے اس کیس یا اس کی کارروائی پر کسی بھی قسم کا تبصرہ نہیں کیا جائے گا۔کیس کی فائنل سماعت یکم جون سے روزانہ کی بنیاد پر ہوگی ۔بعد ازاں شاہ زیب حسن کے وکیل کاشف رجوانہ نے ٹربیونل پر اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے ہائیکورٹ نہ جانے کا اعلان کیا ۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ٹربیونل میں اپنے موکل کا بھرپور دفاع کروں گا۔

مزید :

صفحہ آخر -