بلوچستان کے 500فراری ہتھیار ڈال کر قومی دھارے میں شامل

بلوچستان کے 500فراری ہتھیار ڈال کر قومی دھارے میں شامل

  

کوئٹہ(صباح نیوز) بلوچستان کے 500 سے زائد فراری ہتھیار ڈال کر قومی دھارے میں شامل ہو گئے۔کوئٹہ میں فراریوں کے ہتھیار ڈالنے کی تقریب کا انعقاد کیا گیا جس میں وزیراعلی بلوچستان نواب ثنااللہ زہری اور کمانڈر سدرن کمانڈ لیفٹیننٹ جنرل عامر نذیر بھی شریک ہوئے۔ تقریب میں بلوچستان کے مختلف علاقوں سے تعلق رکھنے والے 500 فراریوں نے ہتھیار ڈالے اور قومی دھارے میں شامل ہوگئے۔قومی دھارے میں شامل ہونے والوں کا کہنا تھا کہ ہمیں بلوچستان کی آزادی کا جھانسہ دے کر بہکایا گیا، پاکستان ہمارا ملک ہے اور بلوچ قوم محب وطن ہے۔ ہم پاک فوج ،ایف سی اور حکومت کے مشکور ہیں جنہوں نے ہمیں عزت سے نوازا، اب ہم مرتے دم تک پاکستان کے وفادار شہری رہیں گے اور ملک کی حفاظت اورترقی میں فورسز کے شانہ بشانہ چلنے کو تیار ہیں۔ قومی دھارے میں شامل ہونے والوں کو قومی پرچم، گلدستے اور دیگر تحائف بھی پیش کئے گئے۔

کوئٹہ(مانیٹرنگ ڈیسک)وزیر اعلیٰ بلوچستان نواب ثناء اللہ زہری کا کہنا ہے کہ بھارتی خفیہ ایجنسی ’’را‘‘کے ایجنٹ بلوچوں کو بھارتی تسلط میں دینا چاہتے تھے، ہماری پوری نسل تباہ ہوئی ہے جوناقابل تلافی نقصان ہے۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ بلوچستان نے کہا کہ ہم ہمیشہ قومی دھار ے میں آنے والوں کی معاونت کریں گے یہ ہماراقومی اوراخلاقی فرض ہے۔بلوچستان دشمنوں نے کئی قیمتی جانوں کو ضائع کیالیکن اب خوشحالی ہماری نسلوں کی منتظرہے۔مخالفین حکومت پرتنقید کی بجائے اپنے2صوبوں کی ترقی پر غور کریں،سڑکوں پر آکر حکومت کو ڈی ریل کرنے والے اب کامیاب نہیں ہو ں گے۔بلوچستان غریب نہیں بلکہ وسائل سے مالا مال صوبہ ہے ،بہت سی قربانیاں دے کر اسے ٹریک پر لائے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ن لیگ کی حکومت میں بلوچستان اور کراچی سمیت پورے ملک میں امن میں بہتری آئی ، ہم وزیر اعظم نواز شریف پر اعتماد کا اظہار کرتے ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ اپوزیشن جلد بازی نہ کرے اقتدار کیلئے 2018ء کا انتظار کیا جائے، سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد جے آئی ٹی کا فیصلہ بھی تسلیم کریں گے۔نوازشریف جب بھی ملک کوترقی کی راہ پرلاتے ہیں سازشیں شروع ہوجاتی ہیں۔

مزید :

صفحہ آخر -