دینی جماعتوں کا سوشل میڈیا پر گستاخانہ مواد کیخلاف ملک گیر احتجاج ، مذمتی قراردادیں منظور

دینی جماعتوں کا سوشل میڈیا پر گستاخانہ مواد کیخلاف ملک گیر احتجاج ، مذمتی ...

  

لاہور (اے این این )دینی جماعتوں نے ملک بھر میں یوم تحفظ ناموسِ رسالتؐ منایا،قانون تحفظ ناموسِ رسالتؐ کو چھیڑنے سے نہ ختم ہونیوالا بحران پیدا ہوگا،نمازجمعہ میں مذمتی قرار دادیں منظور،سوشل میڈیا پرگستاخانہ مواد کیخلاف ملک گیر احتجاج، مظاہرے لاہور میں علماء و کلاء ورلڈ پاسبان ختم نبوت کاہائیکورٹ کے باہر مظاہرہ۔کل جماعتی ’’تحریک تحفظ ناموسِ رسالتؐ‘‘کی اپیل پر دینی جماعتوں جے یو آئی،جے یو پی،ورلڈ پاسبان ختم نبوت ،جماعت اسلامی،عالمی تحریک تحفظ حرمین،جمعیت اہلحدیث،جمعیت اہلسنت، تحریک ملت جعفریہ اور جمعیت علماء و مشائخ نے ملک بھر میں یوم تحفظ ناموسِ رسالتؐ منایا جس کے تحت ملک بھر کی مساجد میں اجتماعات جمعہ پر تمام مکاتب فکر کے علماءِ کرام نے فیس بک پرگستاخانہ مواد مکمل ختم کرنے اور بیرون ملک فرار ہونیوالے گستاخ بلاگرز کی انٹر پول سے گرفتاری کے علاوہ مردان یونیورسٹی واقعہ کو آڑ بناکر قانون تحفظ ناموسِ رسالتؐ کیخلاف ہرزہ سرائی کرنے پر بھرپور صدائے احتجاج بلند کرتے ہوئے مذمتی قرار دادیں منظور کی گئیں۔ لاہور ہائیکورٹ کے باہرمظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے علامہ محمد ممتاز اعوان،میاں اشرف عاصمی ایڈووکیٹ،مولانا محمد حنیف حقانی،ڈاکٹر شاہد نصیر اور چودھری شہباز ایڈووکیٹ نے کہا کہ قانون تحفظ ناموسِ رسالتؐ میں کسی قسم کی ترمیم درحقیقت قانون ناموسِ رسالتؐ کو غیر موثر بنانیکی یہودی و قادیانی سازش ہے مگر ہم اسلام و پاکستان کیخلاف یہودی وقادیانی سازشیں ملیامیٹ کردینگے ۔

مزید :

صفحہ آخر -