دینی مدارس اسلام کے مضبوط قلعے ہیں ،مولانا محمد طاہر

دینی مدارس اسلام کے مضبوط قلعے ہیں ،مولانا محمد طاہر

  

شیرگڑھ (نامہ نگار)پیرطریقت ورہبرشریعت مولانا محمد طاہرآف قطب گڑھ شریف نے کہاہے کہ مدارس اسلام کے مضبوط قلعے ہیں توہین رسالت ایکٹ میں ترمیم کی اجازت کسی کو نہیں دیں گے علماء دیوبندصحیح علماء حق کا کرداراداکررہے ہیں علم ہمارا میراث ہے اسلام میں پردے کی خاص اہمیت ہے دشمنان اسلام مدارس کے خلاف سازشوں میں مصروف ہیں دینی اداروں کی رجسٹریشن کے لئے محکمہ بھی نہیں اس وقت عالم اسلام میں ایک کروڑ25لاکھ سے زائد حفاظ کرام موجود ہیں ان خیالات کااظہار انہوں نے جامع دارالعلوم تعلیم القرآن لعلی کلے بدرگہ میں 55حفظاء کرام،ناظرہ قرآ ن اورتجویدالقرآن کے طلباء کی دستاربندی کی تقریب سے خطاب میں کیاتقریب سے ممتاز عالم دین مولانا بجلی گھر مرحوم کے فرزند ارجمندمفتی مولانامحمد قاسم، مفتی مولانا محمد عمران اللہ، ختم نبوت چارسدہ کے امیر پیر حزب اللہ جان، دارالعلوم ہذٰا کے مہتمم مولانا قاری محمد عمران، مولاناعبدالعلی،مولاناسمیع اللہ ، ماسٹر عبدالمالک اور محمداسرارنے بھی خطاب کیااس موقع پر ختم القرآن بھی کیاگیا جبکہ طلباء کرام کی دستاربندی ان جید علماء کرام نے کی انہوں نے کہا کہ اللہ تعالیٰ نے انسان کو اشرف المخلوقات پیداکیاہے اور انسان کو فرشتوں پر فضیلت دی ہے لیکن ہم اللہ تعالیٰ کے احکامات کی تعمیل کی بجائے شیطان اور ان کے کارندوں کی احکامات پر عمل پیراہیں انہوں نے کہا کہ دنیا اور آخرت میں کامیابی صرف رضاء الہٰی سے حاصل کی جائی گی اوراللہ تعالیٰ کی رضا صرف شریعت کے مطابق زندگی گزارنے میں ہیں انہوں نے کہا کہ اسلام میں مرد وعورت دونوں کو پردہ کرنے کا حکم دیاگیاہے جبکہ کچھ غیر ملکی ادارے عورتوں کی آزادی اور روشن خیالی کے نعرے لگاکر ایک سازش کے تحت ہماری عورتوں اور بچیوں کو گمراہ کرنے میں لگے ہوئے ہیں انہوں نے کہا کہ ہمیں اسلامی احکامات پر عمل پیرا ہوناہوگا تب ہم دنیا وآخرت میں سرخرو ہوسکتے ہیں

مزید :

پشاورصفحہ آخر -