جے آئی ٹی زدہ وزیراعظم دوبارہ قوم کے پاس جائیں،مولا بخش چانڈیو

جے آئی ٹی زدہ وزیراعظم دوبارہ قوم کے پاس جائیں،مولا بخش چانڈیو

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر )پاکستان پیپلزپارٹی پارلیمنٹرین کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات مولا بخش چانڈیو نے کہا ہے کہ جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہونا وزارت عظمیٰ کے منصب کی توہین ہے ۔وفاقی وزراء کی بدزبانی وزیراعظم کو امین اور صادق ثابت نہیں کرسکتی ہے ۔جمعہ کو جاری ایک بیان میں مولا بخش چانڈیو نے کہا کہ عدالت عظمیٰ کے دو سینئر جج صاحبان نے وزیراعظم نواز شریف کو نااہل قرار دیا ہے جبکہ تین ججوں نے اپنے فیصلے میں کہا ہے کہ وزیراعظم نے حقائق چھپائے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ وزیراعظم نواز شریف نے سپریم کورٹ میں جھوٹ بھی بولا ہے اور جعلی دستاویزات بھی جمع کرائی ہیں ۔افسوس ہے کہ اب بھی مسلم لیگ (ن)دوسروں پر الزامات لگانے سے باز نہیں آتے ہیں ۔مولا بخش چانڈیو نے کہا کہ جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہونا وزرات عظمیٰ کے منصب کی توہین ہے ۔جے آئی ٹی زدہ وزیراعظم کو نئے مینڈیٹ کے لیے دوبارہ قوم کے پاس جانا چاہیے ۔انہوں نے کہا کہ وفاقی وزرا کی بدزبانی وزیراعظم کو امین اور صادق ثابت نہیں کرسکتی ہے ۔مسلم لیگ (ن) ایک علاقائی جماعت ہے ۔پوری قوم جھوٹے وزیراعظم کے مستعفی ہونے کا مطالبہ کررہی ہے ۔دریں اثناء مولا بخش چانڈیو نے پارٹی کے سینئر کارکن محمد صالح خاصخیلی کے قتل کی سخت الفاظ میں مذمت کی ہے ۔انہوں نے کہا کہ مخالفین ضمنی الیکشن میں خون کی ہولی کھیلی ۔جام مدد علی کی فتح سے ثابت ہوگیا ہے کہ عوام آج بھی پیپلزپارٹی سے محبت کرتے ہیں ۔مولا بخش چانڈیو نے کہا کہ محمد صالح خاصخیلی کی شہادت رائیگاں نہیں جائے گی اور ان کے قاتلوں کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے گا ۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -