کراچی میں پولیس گارڈ نے ڈی آئی جی پشاور کے جواں سالہ بیٹے کو قتل کردیا ، ملزم گرفتار

کراچی میں پولیس گارڈ نے ڈی آئی جی پشاور کے جواں سالہ بیٹے کو قتل کردیا ، ملزم ...
کراچی میں پولیس گارڈ نے ڈی آئی جی پشاور کے جواں سالہ بیٹے کو قتل کردیا ، ملزم گرفتار

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن )کراچی کے علاقے ڈیفنس میں ڈی آئی جی پشاور کے بیٹے کو قتل کر دیا گیا ۔

اے آر وائے نیوز کے مطابق ڈیفنس کے علاقے خیابان سحر میں محافظ نے ڈی آئی جی پشاور شہاب مظہرولی کے جواں سالہ بیٹے عمیرشہاب کو رسی سے گلا گھونٹ کر قتل کر دیا جس کے بعد ملزم کو گرفتار کر لیا گیا ہے جس نے اعتراف جرم کرتے ہوئے انکشاف کیا کہ اس نے عمیرشہاب کی والدہ سے 2لاکھ روپے ادھار مانگے تھے۔واقعے کے بعد ملزم فقیر محمد نے حیران کن طور پر اپنے آپ کو گھر کے کمرے میں بند کر لیا جسے بعد میں پولیس نے گرفتار کر لیا ۔

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ بنگلے کی سیکیورٹی پر مامورپولیس گارڈنے اپنے اعترافی بیان میں کہا ہے کہ اس نے مقتول کی والدہ سے ذاتی ضرورت کے باعث2لاکھ روپے ادھار مانگے تھے اور رات گئے جب وہ خاتون سے پیسے لینے کیلئے اس کے کمرے کی جانب بڑھا تو عمیرشہاب نے روکنے کی کوشش کی جس پردونوں میں جھگڑا ہوااور پھر اس نے گلے میں رسی ڈال کر اسے قتل کر دیا ۔

واقعے کی اطلاع ملتے ہی پولیس جائے وقوعہ پر پہنچی اور لاش کو تحویل میں لے کر پوسٹ مارٹم کےلئے جناح سپتال منتقل کیا،پولیس نے موقع پرموجود شواہد جمع کرکے قتل کی تحقیقات شروع کردی ہیں۔

پولیس کا کہنا تھا کہ اس واقعے کے حوالے سے ابتدائی اطلاع یہ آئی تھیں کہ بنگلے میں ڈاکو گھس آئے ہیں،تاہم متضاد اطلاعات نے واقعے کو مشکوک بنادیا تھاجبکہ ملزم نے قتل کر نے کے بعد اپنے آپ کو ایک کمرے میں بند کر لیا جہاں سے اسے گرفتار کیا گیا ہے ۔

ڈی آئی جی پشاور مظہرشہاب کے مطابق ان کا بیٹا کمرے میں تھا گارڈ نے بیٹے سے 2 لاکھ روپے مانگے اورادا نہ کرنے پراسے قتل کردیا۔ان کا کہنا تھا کہ جس وقت پولیس گارڈ نے ان کے بیٹے کو قتل کیا اس وقت گھر میں ان کی اہلیہ اور دیگر 2 بچے بھی موجود تھے۔

مزید :

کراچی -