امریکہ میں مسلمان ڈاکٹر اور بیگم انتہائی شرمناک کام کرتے ہوئے گرفتار، وہ کام جس کی وجہ سے کبھی امریکی تاریخ میں کسی کو گرفتار نہیں کیا گیا

امریکہ میں مسلمان ڈاکٹر اور بیگم انتہائی شرمناک کام کرتے ہوئے گرفتار، وہ کام ...
امریکہ میں مسلمان ڈاکٹر اور بیگم انتہائی شرمناک کام کرتے ہوئے گرفتار، وہ کام جس کی وجہ سے کبھی امریکی تاریخ میں کسی کو گرفتار نہیں کیا گیا

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکہ میں ایک بھارتی نژاد مسلم ڈاکٹر اور اس کی بیوی کو ایک ایسے شرمناک الزام میں گرفتار کر لیا گیا ہے جس الزام کے تحت امریکی تاریخ میں کبھی کسی کو گرفتار نہیں کیا گیا۔ خلیج ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق امریکی ریاست مشی گن کے رہائشی 53فخرالدین عطار اور اس کی 50سالہ بیوی فریدہ عطار کم عمر لڑکیوں کے ختنے کرنے میں ملوث تھے۔ یہ ایک ایسا کام ہے جسے امریکہ میں غیرقانونی قرار دیا جا چکا ہے۔

’اب کوئی بھی مسلمان اپنے بچے کا نام۔۔۔‘ چینی حکومت نے مسلمانوں کے خلاف بڑا قدم اُٹھالیا، کونسے نام پر پابندی لگادی؟ جان کر مسلمانوں کو بے حد افسوس ہوگا اور غصہ بھی آئے گا

رپورٹ کے مطابق ان کے ساتھ اس جرم میں ایک ہندو خاتون ڈاکٹر44سالہ جمنا نگروالا بھی ملوث تھی۔ ان تینوں کے خلاف کم عمر لڑکیوں کے ختنے کرنے کے الزام کے تحت مقدمہ درج کر لیا گیا ہے۔ واضح رہے کہ فخرالدین نے 1988ءمیں بھارت شہر گجرات کے برمودا میڈیکل کالج سے ڈگری لی تھی اور بعدازاں امریکہ منتقل ہو گیا۔ اس کی بیوی بی ایم سی میں آفس منیجر کے طور پر کام کرتی تھی۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -