پاکستان بار کونسل کاجمہوری عمل کے جاری رہنے کی حمایت کااعلان

پاکستان بار کونسل کاجمہوری عمل کے جاری رہنے کی حمایت کااعلان

لاہور(نامہ نگار)پاکستان بار کونسل نے 223ویں اجلاس کا اعلامیہ جاری کر دیا ،وائس چیئرمین کامران مرتضی کی صدارت میں پاکستان بار کونسل کا اجلاس لاہور ہائیکورٹ بار کراچی شہداء ہال میں ہوامنعقد ہوا۔ پاکستان بار کونسل نے4قرار دادیں منظور کر لی ہیں، اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ پاکستان بار کونسل ملک میں جمہوری عمل کے جاری رہنے کی حمایت کرتی ہے، آئندہ عام انتخابات بروقت کروانے کے لئے تمام ضروری آئینی اقدامات کئے جائیں، دوسروں کا احتساب کرنے والی عدلیہ اپنے ادارے کے احتساب کو بھی یقینی بنائے، عدلیہ کے ادارے میں مالی، انتظامی اور عدالتی احتساب کو یقینی بنایا جانا چاہیے، عدلیہ میں خود احتسابی کے عمل اور دعوؤں میں شفافیت کی کمی ہے، سپریم جوڈیشل کونسل میں اعلی عدلیہ کے ججز کیخلاف کارروائیوں کو پبلک کیا جائے، اعلیٰ عدلیہ میں ججز کی تقرریوں کے لئے شفاف طریقہ اپنایا جائے، ججوں کی تقرریوں کے لئے بار ایسوسی ایشنز اور پارلیمانی کمیٹی برائے ججز کے ساتھ بامعنی مشاورت کی جائے، پاکستان بارکونسل کی جانب سے کہا گیا ہے کہ سپریم کورٹ ازخود نوٹسز لینے میں تحمل اور احتیاط کا رویہ اپنائے، تمام آئینی ادارے اپنی حدود میں رہ کر ذمہ داریاں ادا کریں، پاکستان بار نے مطالبہ کیا ہے کہ سپریم کورٹ رولز1980ء میں ترمیم کی جائے اور ازخود نوٹسز کی سماعت کے لئے خصوصی بنچ تشکیل دیا جائے۔

مزید : صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...