الیکشن کمیشن کا سرکاری اداروں میں بھرتیوں پر پابندی کا فیصلہ، چیف جسٹس نے از خود نوٹس لے لیا

الیکشن کمیشن کا سرکاری اداروں میں بھرتیوں پر پابندی کا فیصلہ، چیف جسٹس نے از ...
الیکشن کمیشن کا سرکاری اداروں میں بھرتیوں پر پابندی کا فیصلہ، چیف جسٹس نے از خود نوٹس لے لیا

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) چیف جسٹس آف پاکستان ثاقب نثار نے الیکشن کمیشن کی جانب سے سرکاری اداروں میں بھرتیوں پر پابندی لگانے کے فیصلے پر ازخود نوٹس لے لیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار نے معاملے پر ازخود نوٹس لیتے ہوئے سیکرٹری الیکشن کمیشن کو نوٹس جاری کر دیا ہے کیس کی سماعت چیف جسٹس کی سربراہی میں 3 رکنی بنچ کل کرے گا۔

تین رکنی بنچ میں جسٹس عمر عطا بندیال اور جسٹس اعجازالاحسن شامل ہیں۔

خیال رہے کہ الیکشن کمیشن نے سرکاری اداروں میں چند روز قبل بھرتیوں پر پابندی لگائی تھی،ادارے کا موقف ہے کہ اس سے پری پول دھاندلی روکنے میں مدد ملے گی۔

دوسری جانب تجزیہ کاروں کے مطابق الیکشن کمیشن کا یہ فیصلہ مناسب نہیں ،یہ اقدام اس وقت اٹھایا جاتا ہے جب ملک میں نئے انتخابات کی تاریخ کا اعلان کردیا جائے ،لیکن رواں برس ہونے والے عام انتخابات کی تاریخ کے حوالے سے ابھی تک کوئی حتمی اعلان سامنے نہیں آیا۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد