کرونابھارتی ایوان صدر اور پارلیمینٹ تک پہنچ گیا

کرونابھارتی ایوان صدر اور پارلیمینٹ تک پہنچ گیا

  

نئی دہلی(شِنہوا)بھارت میں ایوان صدر اور پارلیمینٹ کی عمارتوں سے متعلقہ دو افراد نوول کروناوائرس کا شکار ہوگئے۔ سرکاری ذرائع نے منگل کواس بات کی تصدیق کی ہے۔لوک سبھا کے اسپیکر دفتر کے ایک عہدیدار نے تصدیق کی کہ پارلیمینٹ کے لوک سبھا سیکرٹریٹ کے ایک ہاوس کیپنگ کارکن میں نوول کروناوائرس کا ٹیسٹ مثبت آیا ہے۔اس کے بعد ملازم کو مقامی اسپتال میں داخل کرایا گیا، جبکہ اس کے خاندان کے افراد کو آئسولیشن کردیاگیا ہے۔عہدیدار کے مطابق، یہ پتہ چلانے کی کوشش کی جارہی ہے کہ متاثرہ ملازم گزشتہ کچھ دنوں میں کتنے افراد کے ساتھ رابطے میں رہا ان افراد میں بھی وائرس کا ٹیسٹ کیا جائے گا۔پیر کے روز پارلیمینٹ کے دونوں ایوانوں لوک سبھا اور راجیہ سبھا کے سکریٹریٹ 21 دن کے لاک ڈان کے پہلے روزیعنی 25 مارچ سے بند رہنے کے بعد دوبارہ کھولے گئے لاک ڈان میں 3 مئی تک توسیع کردی گئی ہے۔

رہائش پذیر 125 خاندانوں کوقرنطینہ کردیاگیا ہے۔پریذیڈنٹ ہاؤ س کے ایک عہدیدار نے تصدیق کی کہ پریذیڈنٹ ہاؤ س میں صفائی کرنے والے کارکن کی بہو میں نوول کروناوائرس کا ٹیسٹ مثبت آیا ہے۔

جس نے کچھ روز قبل نوول کروناوائرس کے باعث ہلاک ہونے والے اپنے ایک رشتہ دار کی آخری رسومات میں شرکت کی تھی۔

مزید :

علاقائی -