پیراگون سکینڈل کیس کی سماعت 6 مئی تک ملتوی

  پیراگون سکینڈل کیس کی سماعت 6 مئی تک ملتوی

  

لاہور(نامہ نگار)احتساب عدالت نے پیراگون سکینڈل میں گرفتار خواجہ برادران کے کیس کی سماعت 6 مئی تک ملتوی کردی،احتساب عدالت کے جج جواد الحسن نے کیس پر سماعت کی،عدالت نے ملزموں خواجہ برادران کو آئندہ سماعت پر دوبارہ پیش ہونے کا حکم دیاہے،گزشتہ روزعدالت نے سابق وفاقی وزیر خواجہ سعد رفیق کی حاضری معافی کی درخواست منظور کرلی،نیب پراسیکیوٹر عاصم ممتاز عدالت میں پیش ہوئے،عدالت میں ایم پی اے خواجہ سلمان رفیق نے اپنی حاضری مکمل کروائی۔عدالت پیشی کے بعد خواجہ سلمان رفیق نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ دنیا کی طرح پاکستان بھی کرونا کی زد میں ہے،جب چین میں کرونا آیا تھا تو حکومت پاکستان کی ذمہ داری تھی کہ بروقت اقدامات کرتی،لیکن عمران خان اور حکومت پنجاب کی جانب سے بہت تاخیر کا مظاہرہ کیا گیا،تفتان میں حکومت بلوچستان نے بھی غیر ذمہ داری کا مظاہرہ کیا

،پہلے دن سے اپوزیشن کہہ رہی ہے کرونا ٹیسٹنگ کا دائرہ کار وسیع کیا جائے،لیکن کرونا ٹیسٹنگ بہت کم کی جا رہی ہے،نجی لیبارٹریوں سمیت ہر جگہ زیادہ تعداد میں ٹیسٹ کئے جائیں تاکہ کرونا کے مریضوں کی اصل تعداد سامنے آ سکے،حکومت کی سستی، ضد اور ہٹ دھرمی ابھی تک جاری ہے ک ڈاؤن کے معاملے پر حکومت کنفیوژن کا شکار ہے،حکومت کی نیت اور کرونا کا ڈیٹا ٹھیک نہیں ہے،مریضوں کی تعداد اور شرح اموات بڑھ رہی ہے،لاک ڈاؤن پر حکومت کلیئر موقف لے اور اس معاملے پر سیاست کی بجائے ٹیکنیکل بنیادوں پر فیصلہ لے،کرونا کے معاملے پر علماء، تاجر، چیمبر آف کامرس کو اعتماد میں لیا جائے تو کوئی زیادہ بات نہیں کرے گا،احساس پروگرام کے پیسے دینے والی جگہوں پر کرونا وائرس کے پھیلاؤ کا خدشہ ہے،اس پروگرام کے تحت بینظیر انکم سپورٹ کا ڈیٹا ہی استعمال کیا جا رہا ہے،کچھ شکایات آ رہی ہیں کہ پیسے لے کر احساس پروگرام کے پیسے دیئے جا رہے ہیں،رمضان بازار نہ لگانے پر ٹارگٹڈ سبسڈی دی جائے،حکومت کو معاشی ایمرجنسی کا اعلان کرنا پڑے گا پھر ہی ملک آگے جا سکے گا،روایتی سستی کا مظاہرہ کیا گیا تو ملک کو اس کا خمیازہ بھگتنا پڑے گا۔

مزید :

علاقائی -