معطل، برطرف ڈاکٹرز بحال نہ ہوئے تو پنجاب بھر کے ہسپتال بند کرینگے، ہڑتالی ڈاکٹرز کی نئی دھمکی

معطل، برطرف ڈاکٹرز بحال نہ ہوئے تو پنجاب بھر کے ہسپتال بند کرینگے، ہڑتالی ...

  

لاہور(جاویداقبال)گرینڈ ہیلتھ الائنس پنجاب کے رہنماؤں نے کہا ہے کہ محکمہ صحت اور پنجاب حکومت بھوک ہڑتال کرنے والے ڈاکٹروں،نرسوں اور پیرا میڈیکل اسٹاف کو نظرانداز کر رہی ہے، مطالبات تسلیم نہ کیے گئے تو بھوک ہڑتالی کیمپ کو ہسپتالوں میں منتقل کر لیں گے اور وہاں احتجاج کا سلسلہ شروع کر دینگے جو لاہور سے شروع کر پورے پنجاب تک پھیل جائے گا اگر ہسپتال بند ہوئے تو اس کی تمام تر ذمہ داری وزیر صحت اور پنجاب حکومت پر عائد ہوگی،وزیر قانون راجہ بشارت بھی مزاکرات کرکے چلے گئے مگر واپس نہیں آئے۔ گزشتہ روز پاکستان فورم میں گرینڈ ہیلتھ الائنس پنجاب کے صدر ڈاکٹر سلمان حسیب،ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن پنجاب کے سینئر نائب صدر ڈاکٹر عاطف مجید چوہدری،پیرامیڈیکل اسٹاف ایسوسی ایشن پنجاب کے چیئرمین ارشد بٹ، نرسنگ ایسوسی ایشن کی رہنما شمشاد نیازی شازیہ، ڈاکٹر ہسپتال کے ڈاکٹر جعفر،پنجاب پیرا میڈیکل کے رہنما حافظ سجاد، بابر گل،محمد قاسم فرحان خان، محمد وسیم،فیصل جارج،حافظ شہزاد،ڈاکٹر وقار،ڈاکٹر عمران، ڈاکٹر فرحان، ڈاکٹر شہزاد اور ڈاکٹر طیب نے شرکت کی۔ ڈاکٹر سلمان حسیب نے کہا کے ہماری بھوک ہڑتال اصولی ہے کرونا وائرس کے خلاف مریضوں کا فرنٹ لائن پر کام کرنے والے ہیلتھ پروفیشنلز کوکرونا سے بچاؤ کیلئے معیاری سازوسامان فراہم نہیں کیا گیاجو سامان دیا گیا وہ انتہائی گھٹیا کوالٹی کا تھا جس کی وجہ سے صوبہ بھر میں 300 سے زائد ہیلتھ پروفیسرز کرونا کا شکار ہوچکے ہیں۔ ہم نے وزیر صحت سے کہا کہ ہیلتھ پروفیشنلز کے ٹیسٹ کیے جائیں جو لوگ کرونا کا شکار ہیں انہیں خصوصی الاؤنس دیا جائے مگر وزیر صحت اور محکمہ نے نظرانداز کیا جس کے خلاف ہم نے بھوک ہڑتال کر رکھی ہے۔ ہم نے وزیر قانون سے مذاکرات کے وقت 20 نکات دئیے جس کو پورا کرنے کا وزیر قانون وعدہ کرکے چلے گئے مگر واپس نہیں آئے۔ انہوں نے کہا کہ بھوک ہڑتالیوں کی حالت غیر ہو رہی ہے اگر کسی کی زندگی کو بھوک ہڑتال کے دوران نقصان پہنچا تو اس کی ذمہ داری حکومت پر عائد ہو گی۔ڈاکٹر عاطف مجید چوہدری نے کہا کہ ہم مذید دو سے تین دن انتظار کریں گے اگر ہمارے مطالبات پورے نہ ہوئے تو یہ بھوک ہڑتالی کیمپ ہیلتھ سیکرٹریٹ سے اٹھا کر ہسپتالوں میں لے جائیں گے اور پھر ہر ہسپتال میں بھوک ہڑتالی کیمپ ہو گا۔ہمارا مطالبہ ہے کہ جو ہیلتھ پروفیشنل کرونا کا شکار ہو اسے فوری ایک لاکھ روپیہ دیا جائے جبکہ پہلے سے معطل یا برطرف ڈاکٹرز کوبھی فوری بحال کیا جائے۔

ہڑتالی ڈاکٹرز دھمکی

مزید :

صفحہ اول -