محکمہ لیبر او ر سوشل سکیورٹی نے 30لاکھ مزدوروں کی رجسٹریشن کھٹائی میں ڈال دی

    محکمہ لیبر او ر سوشل سکیورٹی نے 30لاکھ مزدوروں کی رجسٹریشن کھٹائی میں ڈال ...

  

لاہور(لیاقت کھرل) وزیر اعظم کے احساس کفالت پروگرام کیلئے 30 لاکھ مزدوروں کی رجسٹریشن کا منصوبہ ابتدائی مراحل میں ناکامی ہوگیا، وزیر اعلیٰ پنجاب نے خفیہ رپورٹ پر وزیر محنت پنجاب سے رپورٹ طلب کر لی ہے۔ تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم کے احساس کفالت پروگرام کے تحت دیہاڑی دار، ڈیلی ویجز اور روزانہ کی اجرت پر مزدوری کرنے والے محنت کشوں کو زیادہ سے زیادہ مالی امداد دینے کیلئے صوبہ بھر میں 30 لاکھ مزید مزدوروں کی رجسٹریشن کا منصوبہ بنایا گیا ہے تاہم محکمہ لیبر اور سوشل سیکیورٹی ڈیپارٹمنٹ کا صوبے کے بیشتر اضلاع میں نیٹ ورک موجود ہے اور نہ ہی دفاترہیں جس کی وجہ سے ان اضلاع او رشہروں میں واقع صنعتوں، فیکٹریوں، کارخانوں، ورکشاپوں، دکانوں، ڈیپارٹمینٹل سٹورز، ہوٹلوں، ریسٹورنٹس، پٹرول پمپس اور نجی سکولز و کالج سمیت بھٹوں تک رسائی ممکن نہ ہے۔ ذرائع کے مطابق وزیر اعلیٰ پنجاب کورپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ محکمہ لیبر کے پاس جدید ٹیکنالوجی کا فقدان ہے۔محکمہ لیبر اور سوشل سیکیورٹی ڈیپارٹمنٹ کی نااہلی کے باعث 30 لاکھ نئے مزدوروں کی رجسٹریشن کا منصوبہ کھٹائی میں پڑچکا ہے جس سے یہ محنت کش امدادی رقوم سے محروم ہو نے کا اندیشہ ہے۔ وزیر اعلیٰ پنجاب نے رپورٹ پر وزیر محنت پنجاب انصرمجید خان سے رپورٹ طلب کر لی ہے اور محکمہ لیبر اور سوشل سیکیورٹی ڈیپارٹمنٹ کے ذمہ داروں کے خلاف ایکشن لینے کا حکم دے دیا ہے۔ سوشل سیکیورٹی ڈیپارٹمنٹ کے ترجمان نے کہا ہے کہ محکمہ کا دائرہ کار مزید 10 سے 15 اضلاع تک بڑھایا جا رہا ہے جس میں ضلعی سطح پر نئے دفاتر قائم کئے جا رہے ہیں جبکہ سوشل سیکیورٹی آفیسر اور اسسٹنٹ ڈائریکٹرز بھی بھرتی کئے جا رہے ہیں۔

رپورٹ

مزید :

صفحہ آخر -