لاک ڈاؤن سے فنڈز ختم،لاہور سفاری پارک میں شیروں کے 7جوڑے فروخت،6کی تیاری

لاک ڈاؤن سے فنڈز ختم،لاہور سفاری پارک میں شیروں کے 7جوڑے فروخت،6کی تیاری

  

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) صوبائی محکمہ وائلڈ لائف پنجاب کا سفاری پارک بھی کورونا وائرس کے لاک ڈاون کی وجہ سے نقصاں کا شکار ہو گیا۔ وائلڈ لائف پنجاب نے رقم کے حصول کیلئے افریقی شیروں کے 7جوڑے فروخت کر دئیے جبکہ مزید 6 جوڑوں کی فروخت کی بھی تیاری جاری ہے۔برطانوی خبر رساں ادارے ’بی بی سی‘ کے مطابق سفاری پارک لاہور کے ایک اسسٹنٹ ڈائریکٹر ڈاکٹر محمد اظہرنے بتایا کہ ان شیروں کی فروخت فی کس ڈیڑھ لاکھ روپے اور فی جوڑا تین لاکھ کے حساب سے ہوئی ہے اور ان کی عمریں 1سے 12سال کے درمیاں تھیں۔محکمہ وائلڈ لائف پنجاب کے ڈائریکٹر محمد نعیم بھٹی نے بتایا کہ سفاری پارک کا موجودہ رقبہ 80 ایکٹر ہے جس میں ہمارے پاس 49 شیر تھے۔ ان میں اکثریت افریقی شیروں کی ہے جن کی بریڈنگ سفاری پارک ہی میں ہوئی تھی۔ یہ رقبہ اس تعداد کیلئے ناکافی تھا۔ جبکہ ہمیں متحدہ عرب امارات سے بھی چار شیروں اور ٹائیگرز کے تحفے ملے ہیں۔ ہم چاہتے ہیں کہ ان کو ان افریقی شیروں کے ساتھ بریڈ کیا جائے۔ جس کیلئے جگہ بہت کم پڑچکی ہے، فروخت کیے جانے والے شیروں میں کچھ چھوٹے موٹے نقائص بھی تھے۔اس لئے بہتر سمجھا کہ ان کو فروخت کردیا جائے۔سفاری پارک کی انتظامیہ کو ان کی خوراک کیلئے حکومت کی جانب سے فنڈ بھی نہیں ملتا۔ یہ فنڈ سفاری پارک انتظامیہ خود پورا کرتی تھی۔شیروں کی خوراک پر روزانہ تیس ہزار روپے خرچ آتا ہے مگر اب لاک ڈاون کی صورتحال میں جب عوام سفاری پارک نہیں آ رہے ہیں تو خرچ کو پورا کرنا مشکل ہو گیا تھا۔ان شروں کی فروخت سے انتظامیہ کو آئندہ چند ہفتوں تک اپنا بجٹ چلانے میں بھی مدد ملے گی۔ انہوں نے کہا کہ شیروں کو حکومت پنجاب سے رجسٹر شدہ پرائیوٹ بریڈنگ فارمز کو فروخت کیا گیا ہے۔ سات جوڑوں کے علاوہ مزید چھ جوڑوں کی بھی نشان دہی ہوئی ہے، جن کی فروخت کے لیے بھی مختلف بریڈنگ فارمز کو پیشکش کی گئی ہے۔

شیر فروخت

مزید :

صفحہ آخر -