وہوا:ژالہ باری سے گندم کی فصل تباہ، کسانوں کو کروڑوں روپے کانقصان

  وہوا:ژالہ باری سے گندم کی فصل تباہ، کسانوں کو کروڑوں روپے کانقصان

  

وہوا(نمائندہ پاکستان) سب تحصیل وہوا کے کئی مواضعات میں گذشتہ روز ہونے والی ڑالہ باری نے تباہی کی نئی تاریخ رقم کردی، ہزاروں ایکڑ اراضی پر کاشتہ گندم کی فصل مکمل طور پر تباہ ہوگئی، کسانوں اور زمینداروں کو کروڑوں روپے کا نقصان تفصیل کے مطابق سب (بقیہ نمبر40صفحہ7پر)

تحصیل وہوا کے مواضعات وہوا جنوبی و شمالی کے مغربی علاقوں، موضع لتڑا، موضع رولہاڑی، موضع چوڑھکی، موضع عیسانی، لعلانی، مٹھوان، باجھہ، مڑھا، جادے والی سمیت وہوا کے مغربی مواضعات میں ہونے والی قیامت خیز ڑالہ باری نے گذشتہ تمام ریکارڈ توڑ دیے تیس گھنٹے گزر جانے کے باوجود زمین پر ہر طرف برف کی چادر بچھی ہوئی ہے جبکہ نشیبی علاقوں میں دو فٹ تک برف کی تہ جمی ہوئی ہیں ڑالہ باری سے ان مواضعات کی ہزاروں ایکڑ زرعی اراضی پر کاشتہ مکمل تیار فصل ملیامیٹ ہوکر رہ گئی ہے جس سے کسانوں کی سال بھر کی محنت غارت ہوکر رہ گئی ہے انہیں کروڑوں روپے کا نقصان ہوا ہے اور وہ مقروض ہوکر رہ گئے ہیں فصلیں تباہ ہوجانے سے جہاں کسانوں کے گھروں کے چولہے بجھ گئے ہیں وہیں علاقہ بھر میں غذائی قلت پیدا ہونے کا اندیشہ ہے کسان بورڈ جنوبی پنجاب کے صدر حافظ محمد حسین، تحصیل صدر تونسہ شریف قاضی مستنصر باللہ ہاشمی، کسان اتحاد کھوکھر گروپ کے ضلعی صدر و سابق امیدوار صوبائی اسمبلی قاری بشیر احمد کلاچی، ممبر بشیر احمد درکانی نے وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان خان بزدار سے ڑالہ باری سے متاثرہ مواضعات کو فوری طور پر آفت زدہ قرار دے کر زرعی قرضوں اور آبیانوں کو معاف کرکے کسانوں کی مالی امداد کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

نقصان

مزید :

ملتان صفحہ آخر -