شادی کی تقریب میں دولہا کو کیک دلہن کے منہ پر مارنا مہنگا پڑ گیا

 شادی کی تقریب میں دولہا کو کیک دلہن کے منہ پر مارنا مہنگا پڑ گیا
 شادی کی تقریب میں دولہا کو کیک دلہن کے منہ پر مارنا مہنگا پڑ گیا
سورس: Representational Image

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) شادی کی تقریب میں دولہا کو کیک دلہن کے منہ پر مارنا مہنگا پڑ گیا، اگلے ہی روز دلہن نے طلاق کے لیے عدالت سے رجوع کر لیا۔ میل آن لائن کے مطابق امریکی میگزین ’Slate‘ میں ایک ایڈوائس کالم شائع ہوتا ہے، جس میں شہریوں کے مسائل کے حل تجویز کیے جاتے ہیں۔ اس خاتون کی طرف سے بھی میگزین کے اسی کالم میں اپنی کہانی سنائی گئی ہے۔
خاتون نے میگزین کو لکھے گئے خط میں بتایا ہے کہ شادی کے دن اس کے دولہا نے ایسی حرکت کی جس نے اس کا دل ہی توڑ دیا۔ انہوں نے شادی کا کیک کاٹا تو دولہا نے پورا کیک اٹھا کر دلہن کے منہ پرمَل دیا، جس پر بیچاری دلہن سٹپٹا کر رہ گئی۔ دلہن لکھتی ہے کہ اس نے اسی وقت دولہا سے طلاق کا فیصلہ کر لیا اور اگلے دن عدالت میں طلاق کے لیے درخواست دے دی۔ خاتون نے میگزین سے مشورہ مانگتے ہوئے کہا کہ ’’میرے دوست کہتے ہیں کہ مجھے اپنے شوہر کو ایک موقع دینا چاہیے اور طلاق کی درخواست واپس لے لینی چاہیے۔ آپ بتائیں میں کیا کروں۔‘‘ میگزین کی طرف سے خط کے جواب میں خاتون کو نہ صرف یہ مشورہ دیا گیا ہے کہ وہ طلاق کی درخواست ہرگز واپس نہ لے بلکہ یہ نصیحت بھی کی گئی ہے کہ اسے ایسے بدتہذیب شخص کو ایک موقع دینے کا مشورہ دینے والے دوستوں کے ساتھ تعلق پر بھی نظرثانی کرنی چاہیے۔ 

مزید :

ڈیلی بائیٹس -