مغربی ممالک کی سازش ناکام بنا دی ہے : شامی صدر

مغربی ممالک کی سازش ناکام بنا دی ہے : شامی صدر

دمشق(این این آئی)شامی صدر بشار الاسد نے مغربی ممالک کے ساتھ سکیورٹی تعاون کو مسترد کر دیا ہے اور کہا ہے کہ جب تک یہ ممالک شامی اپوزیشن اور باغی گروپوں کے ساتھ تعلقات منقطع نہیں کرتے، ان سے تعاون ممکن نہیں ہے۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق ر دمشق میں منعقدہ ٹریڈ فیئر میں ایک اجتماع سے خطاب میں کہا کہ فی الحال مغربی ممالک سے سفارتی تعلقات بحال نہیں کیے جائیں گے اور شام میں ان کے سفارتخانے کھولنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔ جیسے ہی انہوں نے اپنی تقریر ختم کی تو اس عمارت کو ایک راکٹ سے نشانہ بنایا گیا، جہاں ٹریڈ فیئر منعقد کیا جا رہا تھا۔اسد نے کہا کہ ان کے ملک نے مغربی طاقتوں کی طرف سے دمشق حکومت کا تختہ الٹنے کی سازش کو ناکام بنا دیا ہے۔اسد نے مزید کہا کہ اگرچہ انہیں ابھی تک جنگ میں مکمل کامیابی حاصل نہیں ہوئی ہے لیکن اس چھ سالہ بغاوت کو ناکام بنانے کی کوشش جاری رہے گی۔شامی صدر بشار الاسد نے اعتراف کیا کہ روس، ایران اور لبنانی جنگجو گروہ حزب اللہ کی معاونت سے ملکی فوج کو کامیابیاں ملی ہیں۔ اسد کے مطابق وہ روس کی ثالثی میں مزید سیز فائر معاہدوں کو خوش آمدید کہیں گے۔بشار الاسد نے مزید کہا کہ جب سیاسی، اقتصادی اور ثقافتی تعلقات بحال کرنے کا وقت آئے گا تو ان کی حکومت پہلے مشرقی ممالک سے رابطہ کرے گی۔ انہوں نے واضح کیاکہ یہ بہت سادہ سی بات ہے کہ مغربی ممالک کے ساتھ سکیورٹی تعاون نہیں کیا جائے گا اور ملک میں ان کے سفارتخانے نہیں کھولے جائیں گے۔انہوں نے کہا کہ ان مغربی ممالک کو پہلے دہشت گردوں سے رابطے ختم کرنا ہوں گے، پھر شامی حکومت ان سے مذاکرات شروع کرے گی۔

مزید : عالمی منظر