عید میلاد النبیؐ مشاہیر اسلام کے مضامین نصاب سے خارج کرنا قبول نہیں، ڈاکٹر اشرف

عید میلاد النبیؐ مشاہیر اسلام کے مضامین نصاب سے خارج کرنا قبول نہیں، ڈاکٹر ...

لاہور(ایجوکیشن رپورٹر)تحریک لبیک یا رسول اللہﷺالعالمی کے قائدین مولانا ڈاکٹرمحمد اشرف آصف جلالی ،حضرت میاں ولید احمد شرقپوری،پیر سید محمد نوید الحسن مشہدی،انجینئر محمد ثروت اعجاز قادری،صاحبزادہ محمد داؤد رضوی،ڈاکٹرمحمدعبدالقدوسخان،پیر محمد شفیق کیلانی،حضرت خواجہ محمدحسن باروی،میاں محمد تنویر کوٹلوی،،حضرت پیر سید خرم ریاض شاہ رضوی،صاحبزادہ سردار احمد رضافاروقی،مفتی محمد عبد العلیم جلالی،ڈاکٹر محمد ظفر اقبال جلالی نے اپنے مشترکہ بیان میں کہاعید میلاد النبیﷺ مشاھیر اسلام اور نظریہ پاکستان کے مضامین نصاب سے خارج کرکے اسلام دشمن قوتوں کو خوش کیا جا رہا ہے۔نصاب پر حملہ قوم کے ا عصاب پر حملہ ہے۔ نصاب تعلیم وہ سانچہ جس کے اندر قوم کے جگر پاروں کو ڈھالا جاتا ہے۔آج اگر نصاب مغربی خواہشات اور غیر اسلامی خطوط پر استوار ہوگاتو کل افرادِ قوم اپنے روشن ماضی اپنے شعائر اور اپنے نظریات سے بے بہرہ اور بیگانہ ہوچکے ہونگے۔

۔پاکستان کے قومی نصاب پر بار بار حملے کیے جا چکے جس سے قومی نصابِ تعلیم کافی حد تک اپنی افادیت کھو چکا ہے۔پنجاب کے پرائمری نصاب سے قائد اعظم اور افواج پاکستان کے لحاظ سے مضامین نکالنا پاکستان کے خلاف ایک گہری سازش ہے۔آج کانٹے کاشت کرکے کل ہم پھول حاصل نہیں کرسکتے۔قومی نصابِ تعلیم کا از سر نو جائزہ لینا ضروری ہے۔راسخ العقیدہ اور محب وطن اور قرآن وسنت کے ماہر سکالرز کا ایک بورڈ تشکیل دیا جائے جو قوم کے نونہالوں کو دی جانے والی خوراک کو گہری نظر سے دیکھے۔اور ہر قسم کے نظریاتی ملاوٹ اور فکری آلودگی سے پاک نصاب مرتب کرے۔ہم عنقریب اصلاح نصاب تعلیم سیمینار منعقد کرکے نصاب کی تمام خرابیاں منظر عام لائیں گے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 4