بڑی صنعتوں کی پیداوار چار سال کی بلند ترین سطح پرپہنچ گئی

بڑی صنعتوں کی پیداوار چار سال کی بلند ترین سطح پرپہنچ گئی

کراچی (اکنامک رپورٹر)پاکستان میں گزشتہ مالی سال کے دوران بڑی صنعتوں کی شرح نمو 5.6 فیصد رہی جو کہ چار سال کی بلند ترین سطح ہے۔تفصیلات کے مطابق بڑی صنعتوں کی پیداوار 4سال کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی ہے۔ادارہ شماریات کے مطابق صرف جون میں ایل ایس ایم گروتھ 3.3 فیصد رہی، بڑی صنعتوں میں 80 فیصد مینو فیکچر نگ شامل ہے۔ایل ایس ایم گروتھ میں نمایاں کردار خوراک ومشروبات، فارماسیوٹیکلز، غیردھاتی معدنی مصنوعات، آٹو موبائلز، آئرن واسٹیل سیکٹر کا رہا جبکہ ٹیکسٹائل، کوک اینڈ پٹرولیم پروڈکٹس، فرٹیلائزر، الیکٹرونکس، پیپر اینڈ بورڈ، انجینئرنگ پروڈکٹس اور ربر پروڈکٹس کے شعبے بھی مثبت زون میں رہے۔ملکی جی ڈی پی میں بڑی صنعتوں کا حصہ 10.7 فیصد ہے، سب سے زیادہ گروتھ آئرن اور اسٹیل سیکٹر میں ہوئی ۔ جس کے بعد الیکٹرونکس، خوراک، مشروبات اور آٹو سیکٹر شامل ہیں۔فارماسوٹیکل سیکٹر میں 9فیصد کی بہتری ہوئی۔ جبکہ چمڑے، لکڑی اور کیمیکلز سیکٹر کی پیداوار میں کمی ریکارڈ کی گئی۔

مزید : کامرس