عطائیوں کیخلاف کریک ڈاؤن ، درجنوں کلینک سیل

عطائیوں کیخلاف کریک ڈاؤن ، درجنوں کلینک سیل

لاہور(سٹی رپورٹر)پنجا ب ہیلتھ کیئر کمیشن کی عطائیوں کے خلاف جاری مہم کے دوران کمیشن کے عملے نے گزشتہ روز 45کلینکس کا معائنہ کیا جن میں سے28 عطائیوں کے اڈے سیل کر دیے اور ان کے خلاف مزید کارروائی کا بھی آغاز کر دیا گیا ہے۔تفصیلا ت کے مطا بق یہ عطائی غیر قانونی طور پر مختلف اقسام کی طبی سہولیات مہیا کر رہے تھے۔ جن میں ایلو پیتھی کے ذریعے علا ج، ڈینٹل کلینک اور لیباٹریرزکو چلانا شامل ہے ۔ چونگی امر سدھو کے علاقے میں حافظ شفاء جراہی اور احمد جراہی شفاء خانہ ،سٹیلائٹ ٹاؤن میں مدینہ میڈیکل سٹور اوربھٹی کلینک ،یوحنا آباد میں عرفان میڈیکل اورطارق میڈیکل سٹور،گجومتہ میں چوہدری میڈیکل سٹور، قینچی بازار میں النور ڈینٹل اینڈ آپٹیکل سنٹر، ہیلتھ کئیر کلینک اورمحمد اشرف کلینک،گرین ٹاؤن اور باگڑیاں میں مدینہ ہومیوپیتھک اینڈ ڈائیگناسٹک لیب، فاطمہ لیب ، احمد فرسٹ ایڈ سنٹر اور سردار جی یونانی دواخانہ،شالیمار لنک روڈمیں شالیمار لیبارٹری، داروغہ والا میں سراج الصحت اور طارق کلینکل لیبارٹری، فتح گڑھ میں ہاشمی میڈیکل سٹور، حمید پورہ میں الشفاء کلینک، سلامت پورہ میں افضل بٹ جراح، بیگم کوٹ میں میاں میڈیکل سٹور اینڈ کلینک جبکہ واہگہ ٹاؤن میں ریاض ہڈی جوڑ، چوہدری ہسپتال الٹرا ساؤنڈ اینڈ میٹرنٹی ہوم، شیخ عمران ہڈی جوڑ، ہومیو ڈاکٹر شاہین عارف، سمائل ڈینٹل کلینک، امیرِ ملت میڈیکل سٹور، اعتماد کلینک کو سیل کر دیا گیا ۔کمیشن کی معائنہ ٹیموں نے 17 کلینکس کو رجسٹریشن اور کوالیفائیڈ اسٹاف ہونے کی وجہ سے کام کرنے کی اجازت دے دی تھی جبکہ سیل کی گئی علاج گاہوں میں ایلوپیتھی 7،ہڈی جوڑ6، میڈیکل سٹور 5 ،لیب4،ڈینٹل 2،ہومیوپیتھک 2،طب 2 شامل ہیں۔ اس حوالے سے پنجاب ہیلتھ کئیر کمیشن کے چیف آپریٹنگ آفیسر ڈاکٹرمحمد اجمل خاں نے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ تاریخ میں پہلی مرتبہ پورے پنجاب میں ایک مربوط اور منظم مہم کا آغاز کیا گیاجس کے نتیجہ میں ابتک5600سے زائد عطائیت کے اڈے سربمہر کیے گئے ہیں اور کمیشن نے 34ملین روپے سے زائد کے جرمانے عائد کیے ہیں۔لاہور میں گزشتہ 3ہفتوں سے جاری مہم میں200 سے زائد علاج گاہوں کا معائنہ کیا گیا جس میں125 علاج گاہوں کو عطائیت کی وجہ سے سیل کر دیا گیا۔اس سال کے شروع میں 105جعلی لیبارٹریز کو بھی بند کیا گیا تھا۔انھوں نے مزید کہا کہ عطائیت ایک مافیا کے طور پر کام کر رہی ہے اور کمیشن تمام ایسے لوگوں سے اپیل کرتی ہے کہ عطائیوں کے اس گھناؤنے کام کی روک تھام کے لیے کمیشن سے تعاون کریں اور ان عطائیوں کو پریکٹس کرنے کے لیے کسی مستند معالج کی جانب سے مدد فراہم کرنا بھی قانوناََ جرم ہے ،لہذا وہ عطائیوں سے اپنا تعاؤن جلد سے جلد ختم کریں ۔

 

مزید : میٹروپولیٹن 1