دہشت گردی کاخطرہ،وکلا مال روڈپر احتجاج نہ کر یں، سکیورٹی الرٹ جاری

دہشت گردی کاخطرہ،وکلا مال روڈپر احتجاج نہ کر یں، سکیورٹی الرٹ جاری

لاہور(آن لائن)لاہورکے مال روڈپردہشتگردی کاخطرہ ہے سیکیورٹی اداروں نے الرٹ جاری کردیا ہے،وکلاء برادری سے مال روڈپراحتجاج نہ کرنے کی اپیل کی گئی ہے سکیورٹی اداروں نے لاہورمیں مال روڈپروکلاء کے احتجا ج میں دہشتگردانہ واقعہ رونماہونے کاخدشہ ظاہرکرتے ہوئے الرٹ جاری کیا، سکیورٹی اداروں نے صدرلاہوربارایسوسی ایشن کوآگاہ کیا،وکلاء 22اگست کومال روڈپرکسی جگہ اکٹھے نہ ہوں ،سکیورٹی اداروں کے مطابق دہشتگردمال روڈ،فیصل چوک پرکارروائی کرسکتے ہیں ،وکلاء سے درخواست ہے وہ اپنااحتجا ج منسوخ کردیں۔ اس حوالے سے کہا گیا ہے لاہور اور گردو نوح میں دہشت گردی کے زیادہ خطرات پائے جاتے ہیں ۔ الرٹ میں کہا گیا ہے کہ لاہور اور ارد گرد دہشت گردی کے حملے کے لئے انتہائی خطرناک ہیں. حالیہ اطلاعات کے مطابق دہشت گردوں نے لاہور اور قریبی علاقوں میں نرم اہداف کو نشانہ بنایا ہے۔ حالیہ خطرے کے انتباہات کے نتیجے میں، خود کش بمباری، VBIED، IED، بھارتی / افغان جنگجو انٹیلیجنس ایجنسیوں، ٹی ٹی پی، سابق لیج / ایس ایس پی، داش اور جمات الاحرارا وغیرہ کے عناصر کی طرف سے فائرنگ کا امکان ہے ۔ لاہور میں خاص طور پر کمزور اہداف عوامی جگہوں، عوامی واقعات، مصروف بازاروں، شاپنگ مالز، اہم شخصیات، ایل ای ای افسروں / حکام، مال روڈ لاہور میں جلوس / اجتماعی مقامات پر مشتمل ہیں جہاں کئی حساس اور اہم عمارت واقع ہیں یعنی گورنر ہاؤس، پنجاب اسمبلی ، لاہور ہائی کورٹ، اسٹیٹ بینک آف پاکستان، 90 سپا، پی سی ہوٹل، اواری ہوٹل اور دیگر اہم وفاقی اور صوبائی دفتر ہیں۔ لاہور میں حال ہی میں دہشت گردی کے حملوں نے مال روڈ پر مل روڈ پر خودکش دھماکوں کی طرح، مردم شماری ٹیم اور فیروز پور روڈ پر معصوم شہریوں کی قیمتی زندگی کا دعوی کیا ہے اور ایل ایی کے اہلکاروں کو یہ فرض ثابت ہوتا ہے کہ دہشت گردی اس کے اوپر نرم مقاصد پر حملہ کرنے کا ارادہ رکھتی ہے. ضلع انتظامیہ / ایل ای ای کسی بھی ناخوشگوار واقعات کو روکنے اور روکنے کے لئے محتاط اور اعلی انتباہ رکھنے کے لئے حساس ہونا ضروری ہے. موجودہ سلامتی کی صورت حال کو دیکھتے ہوئے، یہ تجویز کی جاتی ہے کہ تمام سطحوں پر ناقابل اعتماد سیکورٹی اقدامات اٹھائے جائیں. کسی بھی غیر معمولی واقعہ سے بچنے کے لئے تمام محاذوں پر انتہائی محتاج اور بلند حفاظتی تدابیر اختیار کیے جائیں گے.معلومات اور ضروری کارروائی کے لئے، آئی جی جی / پی پی او، پنجاب،ڈویڑنل کمشنر، لاہور. پولیس کے ایڈیشنل آئی جی (سی ٹی ٹی)، پنجاب. پولیس کے اضافی آئی جی (خصوصی برانچ)، پنجاب کیپٹل سٹی پولیس آفیسر، لاہور ڈپٹی کمشنر، لاہور149مشترکہ ڈائریکٹر جنرل، انٹیلی جنس بیورو، لاہور سی او او، ہیڈکوارٹر 4 کورپس، لاہور.

مزید : صفحہ اول