ڈینگی پشاور کے بعد مردان بھی پہنچ گیا،متعدد افراد متاثر وائس کا خاتمہ یقینی بنائینگے :شہرام ترکئی

ڈینگی پشاور کے بعد مردان بھی پہنچ گیا،متعدد افراد متاثر وائس کا خاتمہ یقینی ...

مردان ( بیورورپورٹ)پشاور کے بعد مردان میں بھی ڈینگی کا حملہ،3خواتین سمیت 4 افرادمیں وائرس کی تصدیق ہوگئی،ضلع میں ایمرجنسی نافذکردی گئی ڈپٹی کمشنر آفس میں کنٹرول روم قائم کردیاگیا خیبرپختون خوا کے دوسرے بڑے شہر مردان میں ڈینگی مچھر نے متعدد شہریوں کو کاٹ لیاہے شہر سمیت مختلف علاقوں میں اب تک چار افراد میں ڈینگی وائرس کی تصدیق ہوگئی ہے ڈینگی بخار سے متاثرہ مریض سامنے آنے کے بعد انتطامیہ نے سرجوڑ لئے اور ضلع میں ایمرجنسی نافذ کرنے کا اعلان کرتے ہوئے مردان میڈیکل کیمپلکس میں الگ وارڈ قائم کردیاگیا اسپتال ذرائع کے مطابق متاثرہ مریضوں میں علاقہ گڑھی کپورہ کا تیرہ سالہ طالب علم حبیب اللہ ولد عابدالزامان ،گلی باغ ہوتی کی اٹھارہ سالہ مسماۃ (ل ) دختر عامر خان،تخت بھائی کی پندرہ سالہ مسماۃ (س ) دختر باچہ گل اور ضلع صوابی کے علاقہ دوبیان کی بیس سالہ مسماۃ (ش)دختر نذیر محمد ساکن دوبیان بازار ضلع صوابی شامل ہیں اسپتال میں مریضوں کا علاج ومعالجہ جاری ہے ڈپٹی کمشنر کے دفتر میں اعلیٰ سطحی میں متاثرہ علاقوں میں سپرے کرنے اور کنٹرول روم قائم کرنے کا فیصلہ کیاگیا ہیاورجنگی بنیادو پر احتیاطی تدابیر اختیار کرنے کی ہدایات دی گئی ہیں ڈی او فنانس مردان ظہیر الدین بابر کی صدارت میں ہونے والے اجلاس میں تحصیل نائب ناظم مشتاق سیماب ، اسسٹنٹ کمشنر زمردان ،کاٹلنگ، اور تخت بھائی کے علاوہ ایم ایم سی کے پروفیسر ڈاکٹر امیر خان بلدیہ مردان ، کاٹلنگ ، تخت بھائی اور محکمہ صحت کے افسران نے شرکت کی ڈی او فنانس ظہیرالدین بابر نے کہا کہ مردان میں ڈینگی وائرس سے بچاؤ کے بار ے میں ایمرجنسی نافذ کی گئی ہے۔ اس سلسلے میں تمام متعلقہ افسران کو ہدایت جاری کی گئی کہ تمام تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتالوں میں بھی فوری طور پر ڈینگی وائرس سے متاثرہ مریضوں کیلئے علیٰحدہ وارڈز قائم کی جائیں۔ انہوں نے تمام اسسٹنٹ کمشنرز ، ٹی ایم اوز ، اور محکمہ صحت کے افسران کو سختی سے ہدایت کی کہ آج سے ضلع بھر میں ڈینگی سے بچاؤ سپرے مہم کا آغاز کیا جائے۔ اس ضمن میں ڈی سی آفس مردان میں ایمرجنسی کنٹرول روم قائم کیا گیا ہے۔ جس کا ٹیلی فون نمبر ہے۔ 0937-9230048-45ہیں۔

پشاور( سٹاف رپورٹر)خیبرپختونخوا کے سینئر وزیر برائے صحت شہرام ترکئی نے آج پیر کو ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ مشکل کی اس گھڑی میں عوام اور صوبائی حکومت شانہ بشانہ کھڑے ہوکر ڈینگی وائرس کا خاتمہ یقینی بنائیں گے۔انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت اس وائرس پر جلد از جلد قابو پانے اورعوام کو اس وائرس سے تحفظ فراہم کرنے کے لئے بھر پور اقدامات کر رہی ہے ۔سینئر وزیر صحت نے کہا کہ خیبر پختونخوا میں دوسرے صوبوں کی نسبت ڈینگی وائرس سے ہلاکتوں کاخدشہ بہت کم ہے ،انہوں نے کہا کہ راولپنڈی،فیصل آباد،لاہورودیگر شہروں میں ڈینگی وائرس نے جتنا نقصان کیا تھا اتنا خیبر پختونخو ا میں نہیں ہوا ۔اسی سلسلے میں صوبائی حکومت عوام کو بھی خبردار کرتی ہے کہ کسی بھی جگہ اگر پانی کھڑا ہے اس کو فوری طور پر ختم کریں۔اس حوالے سے ہیلتھ یونٹس اور ہیلتھ موبائلز بھی اپنا کام کر رہی ہیں۔انہوں نے کہا کہ ڈینگی وائرس کو ختم کرنے کے لئے طلباء اور ولنٹئیرز کوبھی ساتھ کھڑا ہونا ہوگا تاکہ اس سلسلے میںآگاہی مہم چلائی جاسکے اور کم سے کم وقت میں عوام کو احتیاطی تدابیر سکھائی جاسکیں۔شہرام ترکئی نے مزید کہا کہ تمام مساجد کے علماء کرام کو بھی اس مہم میں شریک کیا جائے گا جو لاؤڈسپیکرز پر عوام کو دن میں کئی بار ڈینگی وائرس سے بچنے کے لئے احتیاطی تدابیر بتائینگے اوراس کے لئے مساجد کے علماء سے تفصیلی بات کی جائے گی اور اس میں پمپلٹس تقسیم کیے جائیں گے تاکہ وہ اسی مناسبت سے عام لوگوں کو آگاہی فراہم کرسکیں ۔سینئر وزیر صحت نے پریس کانفرس میں یہ بھی کہا کہ ہسپتالوں میں ڈٖینگی وائرس میں مبتلا لوگوں میں سے بہت سے لوگ صحت یاب ہوکرواپس اپنے گھروں کو چلے گئے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ صوبے میں فنڈز کی کمی نہیں ۔اس سلسلے میں جتنے بھی فنڈز درکار ہوں گے صوبائی حکومت فراہم کرے گی لیکن اس وائرس کو مکمل طور پر ختم کرکے ہی دم لینگے۔انہوں نے مزید کہا کہ ہمارے کوشش ہے کہ عوا م کو صحت کی تمام تر سہولیات فراہم کی جائیں اور اس ضمن میں ہماری کوششیں جاری ر ہیں گی ۔سینئر وزیر نے ڈی سی پشاور کو بھی ہدایت کی کہ وہ اس بارے میں معلومات اکٹھی کر کے میڈیا کو دیں۔

مزید : کراچی صفحہ اول