کوہاٹ ،جمعیت کے انتخابی امیدواروں کی درخواستیں جمع

کوہاٹ ،جمعیت کے انتخابی امیدواروں کی درخواستیں جمع

کوہاٹ (بیورورپورٹ) جمعیت علماء اسلام کوھاٹ میں الیکشن 2018 کے لیے قومی و صوبائی اسمبلی کے امیدواروں سے درخواستیں جمع‘ مفتی ابرار سلطان‘ شیخ الحدیث مولانا شیر بہادر‘ بلال شنواری اور جوہر سیف اللہ بنگش امیدواران قومی اسمبلی کی صف میں شامل‘ قومی و صوبائی اسمبلی کی مخصوص نشستوں کے لیے بھی درخواستیں جمع‘ تفصیلات کے مطابق آنے والے انتخابات جو 2018 میں متوقع ہیں کے لیے جمعیت علماء اسلام کوھاٹ نے قومی و صوبائی اسمبلی سمیت مخصوص اور اقلیتی نشستوں کے امیدواروں سے درخواستیں طلب کی تھیں جس میں کارکنان نے انتہائی دلچسپی کا مظاہرہ کرتے ہوئے درخواستیں جمع کرا دیں قومی اسمبلی این اے 14 کے لیے سابق ایم این اے مفتی ابرار سلطان‘ شیخ الحدیث مولانا شیر بہادر‘ بلال شنواری اور جوہر سیف اللہ خان بنگش امیدواروں کی صف میں شامل ہو گئے ہیں صوبائی اسمبلی حلقہ پی کے 39 سے حافظ محمد سعید‘ ڈاکٹر شکیل‘ تاج محمد خان‘ کرنل شاہ داد خان‘ مولانا شمس الحق اور زاہد جاوید نے درخواستیں جمع کرا دی ہیں حلقہ پی کے 38 میں شاہد محمود تحصیل نائب ناظم‘ ناصر الدین شنواری‘ جوہر سیف اللہ‘ پیر عبداللہ شاہ اور ریاض اکبر بنگش شامل ہیں جبکہ حلقہ پی کے 37 سے ڈاکٹر عمر حیات اور حاجی جمیل پراچہ سامنے آئے ہیں اقلیتوں کی مخصوص نشستوں پر مبشر ناز اور رنجیت سنگھ امیدوار کے طور پر سامنے آئے ہیں جبکہ خواتین کی صوبائی اسمبلی کی مخصوص نشستوں کے لیے نصیر الدین شنواری کی والدہ حسن آرا‘ زوجہ دلبر خان اور نجمہ شاہین نے درخواستیں جمع کرا دی ہیں تاہم قومی اسمبلی کی مخصوص نشست کے لیے بھی نجمہ شاہین نے امیدوار کے طور پر اپنے آپ کو پیش کر دیا ہے دلچسپ امر یہ ہے جمعیت کے اہم رہنماؤں گوہر سیف اللہ خان بنگش اور غلام حبیب نے کسی دلچسپی کا اظہار نہیں کیا ہے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر