مؤثر مانیٹرنگ سے عازمینِ حج کو مہیا سہولیات کا معیار بہتر ہو رہا ہے،ضمیر احمد

مؤثر مانیٹرنگ سے عازمینِ حج کو مہیا سہولیات کا معیار بہتر ہو رہا ہے،ضمیر ...

مکہ مکرمہ(پ ر) مؤثر مانیٹرنگ سے عازمینِ حج کو مہیا سہولیات کا معیار مزید بہتر ہو رہا ہے۔ پہلی مرتبہ پرائیویٹ کے ساتھ سرکاری سکیم کی مانیٹرنگ کا آغاز ہوا ہے۔یہ بات مکہ مکرمہ میں وزارتِ مذہبی امور کے زیر انتظام دفتر امور حجاج کے شعبہ مانیٹرنگ کے سربراہ ضمیر احمدنے ایک انٹرویو میں کہی۔ انہوں نے کہا کہ فریضہ حج کی ادائیگی ہر صاحبِ استطاعت مسلمان پر زندگی میں ایک بار فرض ہے۔ اس فرض کی آسانی اور سہولت سے ادائیگی کیلئے وزارتِ مذہبی امور کے مختلف شعبے پاکستان اور سعودی عرب میں مسلسل مصروفِ عمل ہیں۔ مکہ مکرمہ اور مدینہ منورہ میں سرکاری اور پرائیویٹ سکیم کے عازمینِ حج کو ملنے والی سہولیات اور اپنے شعبوں کی کارکردگی کا جائزہ لینے کیلئے اس سال مؤثر مانیٹرنگ سسٹم کا انتظام کیا گیا ہے۔ اس مقصد کیلئے ڈائریکٹر مانیٹرنگ کی سربراہی میں مکہ اور مدینہ منورہ کیلئے مانیٹرنگ ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں۔ یہ ٹیمیں سرکاری اور پرائیویٹ سکیم کے عازمینِ حج کی رہائش گاہوں پر جا کر ان کو میسر سہولیات کے معیار کے بارے میں آگاہی حاصل کرتی ہیں۔ ڈائریکٹر شعبہ مانیٹرنگ ضمیر احمد نے بتایا کہ اس سال پہلی مرتبہ پرائیویٹ حج ٹور آپریٹرز کی مانیٹرنگ کے ساتھ ساتھ سرکاری سکیم کی مانیٹرنگ کا بھی باقاعدہ آغاز کیا گیا ہے۔ جس کا مقصد رہائش، کھانے اور ٹرانسپورٹ کی سہولیات مہیا کرنے والے کنٹریکٹرز کی کارکردگی پر نظر رکھنا اور سہولیات کے اعلیٰ معیار کی فراہمی کو یقینی بنانا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ عازمینِ حج کسی بھی قسم کی مشکل کی صورت میں یا رہنمائی حاصل کرنے کیلئے رہائش گاہ کے استقبالیہ پر موجود معاون حج یا سیکٹر کمانڈر سے رابطہ کریں۔ عازمینِ حج سعودی عرب میں قائم ٹال فری نمبر 8001166622 پر رابطہ کر کے بھی اپنی شکایت درج کروا سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ان کی مانیٹرنگ ٹیمیں اب تک 395 پرائیویٹ حج ٹور آپریٹرز کی چیکنگ کر چکی ہیں۔ مکہ مکرمہ اور مدینہ منورہ میں سرکاری سکیم کی 87 رہائشگاہوں کا دورہ کر کے عازمینِ حج کی شکایات کا ازالہ کیا جا چکا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سرپرائز چیکنگ سے جہاں کنٹریکٹرز اور عملہ کی کارکردگی میں بہتری آئی ہے وہیں عازمینِ حج میں بھی یہ احساس پایا جاتا ہے کہ حکومت پاکستان مناسب طریقے سے ان کی دیکھ بھال کر رہی ہے اور سہولیات میں کسی بھی کمی بیشی کی صورت میں اس کا فوری ازالہ ممکن ہے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر