2025 تک برآمدات150 ارب ڈالر تک پہنچانے کا عزم ہے،رجی ابود

2025 تک برآمدات150 ارب ڈالر تک پہنچانے کا عزم ہے،رجی ابود

کراچی( پ ر) پاکستان نے کاروباری سرگرمیوں کو فروغ دیتے ہوئے ، سال 2025 تک ملکی برامدات کو 150 ارب تک پہنچانے کا ہدف رکھا ہے۔ اس حوالے سے نوجوان کاروباری افراد اور اسٹارٹ اپ ادارے نہایت اہم کردار ادا کر سکتے ہیں۔ کاروبار کو فروغ دینے کے لیے عالمی راہنما ادارے نے پاکستان اور مشرق وسطیٰ کے خطے کے 20 بہترین موجّدین کی فہرست جاری کر دی ہے، جو اس خطے میں عالمی معیار کے کاروباری طریقہ کارکانفاذ کریں گے۔ ChangemakerXchangeSummit کے نام سے ایک بین الاقوامی اجلاس بھی منعقد کیا جا رہا ہے، جس میں مشرق وسطیٰ اور خطّے کے دیگر ممالک سے کاروباری ماہرین شرکت کریں گے۔ یہ اپنی نوعیت کا اوّلین اجلاس ہے، جس کی معاونت اشوکاسوشل اینٹر پرنیورشپ پلیٹ فارم کر رہا ہے۔ اس کے علاوہ ڈیجیٹل ٹرانسفارمیشن انیبلرSAP بھی اس اجلاس کا معاون ہے۔ اس طرح سماجی ترقی سے منسلک 20 بہترین موجدین کا انتخاب کیا گیا ہے، جنہیں عالمی اورعلاقائی سطح پرمالیاتی معاونت ،وسائل اورتربیت فراہم کی جائے گی۔ اس اجلاس کے موقع پر ، خطّے کے18سماجی کاروباری افرادنے شرکت کی ، جب کہ ملک شام سے تعلق رکھنے والے دوکاروباری افراد کوچینج میکرزکے طور پرمنتخب کیا گیا، لیکن وہ اس اجلاس میں شرکت نہ کر سکے۔حکومت پاکستان بھی China-Pakistan Economic Corridor (CPEC) منصوبے کے تحت اس اجلاس کی معاونت کررہی ہے، تاکہ کاروباری افراداور اسٹارٹ اپ کمپنیوں کو فروغ دے کر سال 2025 تک ملکی برامدات کو150 ارب ڈالر تک پہنچایا جا سکے۔ مشرق وسطیٰ ، شمالی افریقہ ، لیوانٹ اور پاکستان میں SAP ادارے کے منیجنگ ڈائریکٹر رجی ابود نے کہا کہ سال 2025 کے پاکستان کے کاروباری اہداف کے حصول کو یقینی بنانے کے لئے،اشوکااورSAP بھی کاروبار ی بر ادری کی معاونت کر نا چاہتے ہیں،تاکہ معاشرے میں مثبت تبدیلی اور ترقی لائی جاسکے۔ اس سلسلے میں عالمی سطح کی بہترین کاروباری حکمت عملی کا نفاذ کیا جائے گا اورایجادات کے فروغ کیلئے اہم معلومات اور تربیت فراہم کی جائے گی۔ اس طرح پاکستانی کاروباری افراد اپنے منصوبوں کو وسعت دے سکیں گے۔پاکستان میں خصوصی افراد کی ترقی کے لئے تنزیلہ خان نے ایک ادارہ "کریئیٹیو ایلی" قائم کیا ہے، جو جسمانی معذوری کا شکارافراد کی صلاحیتوں کو فروغ دینے کے لئے فنّی اور ثقافتی و سماجی سرگرمیاں منعقد کر تا ہے۔پاکستان میں مدیحہ رضا کو بھی چینج میکر کے طور پر منتخب کیا گیا ہے جو خواتین کے حقوق اور کارکردگی بڑھانے کے پروگرام "ویمین تھرو " فلم کی بانی ہیں ۔"انڈیپنڈنٹ تھئیٹرپاکستان" کے بانی عظیم حامد اور اسکول آف سکلز کے بانی سعد حامد بھی نوجوانوں کی ترقی اورصلاحیتوں کو فروغ دے رہے ہیں۔

 

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر