مسلم لیگ(ن) اور پیپلز پارٹی قومی احتساب کمیشن کے قیام پر متفق، نیب کے کیسز نئے کمیشن کو منتقل ہوجائیں گے: جیو نیوز

مسلم لیگ(ن) اور پیپلز پارٹی قومی احتساب کمیشن کے قیام پر متفق، نیب کے کیسز نئے ...
مسلم لیگ(ن) اور پیپلز پارٹی قومی احتساب کمیشن کے قیام پر متفق، نیب کے کیسز نئے کمیشن کو منتقل ہوجائیں گے: جیو نیوز

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)ملک کی دو بڑی سیاسی جماعتیں ، پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ(ن) نیب کے خاتمے کے قریب پہنچ گئی ہیں ۔ نیب کے خاتمے کے بعد نیا قومی احتساب کمیشن قائم کیا جائے گا ، حکمران جماعت مسلم لیگ (ن) اور اپوزیشن جماعت پیپلزپارٹی نئے  قومی احتساب کمیشن کے قیام پر متفق ہوگئی ہیں۔ قومی احتسابکمیشن کادائرہ اختیار صرف وفاقی اداروں پرہوگاجس کے قیام کے بعد نیب میں زیرسماعت تمام کیسزنئے احتساب کمیشن کو منتقل ہوجائیں گے۔

وزیر خارجہ سے امریکی سفیر کی ملاقات،ڈیوڈ ہیل کی جنوبی ایشیاپرامریکی صدرکی پالیسی پرخواجہ آصف کو بریفنگ

نجی ٹی وی چینل جیو نیوز نے دعویٰ کیا ہے کہ وفاقی وزیر قانون زید حامد کی سربراہی میں پارلیمانی کمیٹی کا اجلاس ہوا جس میں پارلیمانی کمیٹی کے ممبران 55 میں سے 53 نکات پرراضی ہوگئے ہیں۔ اس کے ساتھ ساتھ حکمران جماعت مسلم لیگ(ن) اور پاکستان پیپلز پارٹی نیب کو ختم کرکے ایک نئے قومی احتساب کمیشن کے قیام پر متفق ہوگئے ہیں۔ٹی وی چینل کے مطابق پیپلز پارٹی فوج اورعدلیہ کوبھی نئے قومی احتساب کمیشن کے دائرہ کارمیں شامل کرنے پربضدہیں اورحکومتی اراکین پیپلزپارٹی کے  اس مطالبے سے متفق ہو گئے ہیں جبکہ اجلاس میں آفتاب احمد شیر پاﺅنے پیپلزپارٹی کے مطالبے کو رد کرتے ہوئے موقف اختیار کیا کہ ہمیں وہ کرنا چاہیے جو کیا جا سکے ۔فوج وعدلیہ کمیشن کا بائیکاٹ کرسکتی ہیں کیوں کہ ان کااپنا احتساب کانظام موجود ہے۔پارلیمانی کمیٹی کا اجلاس ملتوی کردیا ہے جبکہ آئندہ اجلاس میں عوامی عہدیدار،کرپشن کی تعریف واضح کی جائے گی۔

مزید : قومی /اہم خبریں