یورپی ائیرپورٹ پر قطر ائیرویز کا جہاز دیکھ کر اماراتی خاندان نے ایسی حرکت کرڈالی کہ تمام مسافروں کے منہ کھلے کے کھلے رہ گئے، عرب ممالک کے درمیان دشمنی اتنی بڑھ گئی کہ اب۔۔۔

یورپی ائیرپورٹ پر قطر ائیرویز کا جہاز دیکھ کر اماراتی خاندان نے ایسی حرکت ...
یورپی ائیرپورٹ پر قطر ائیرویز کا جہاز دیکھ کر اماراتی خاندان نے ایسی حرکت کرڈالی کہ تمام مسافروں کے منہ کھلے کے کھلے رہ گئے، عرب ممالک کے درمیان دشمنی اتنی بڑھ گئی کہ اب۔۔۔

  

اوسلو(مانیٹرنگ ڈیسک) متحدہ عرب امارات اور قطر کی حکومتوں کے درمیان تو سیاسی تنازعہ جاری تھا ہی، لیکن یہ دشمنی عوام کو بھی کس طرح اپنی لپیٹ میں لے چکی ہے، اس کا اندازہ ناروے کے ایک ائرپورٹ پر پیش آنے والے حیران کن واقعے سے بخوبی کیا جا سکتا ہے۔

خلیج ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق شارجہ سے تعلق رکھنے والا اماراتی شہری عیسیٰ البلوشی اور اس کا خاندان ناروے میں گرمیوں کی چھٹیاں گزارنے گیا ہوا تھا، جہاں سے انہیں لندن روانہ ہونا تھا۔ جب وہ اوسلو ائرپورٹ پر پہنچے تو جہاز کو دیکھتے ہی اس میں سوار ہونے سے انکار کردیا، کیونکہ یہ قطر ائیرویز کا جہاز تھا۔ قطر ائرویز کے ذریعے سفر سے صاف انکار کے بعد انہیں برٹش ائیرویز کی ایک پرواز کے ذریعے لندن پہنچایاگیا۔

بچے کو جنم دیتے ہی خاتون کا جسم ٹوٹ کر دو حصے ہوگیا، مگر کیسے؟ ایسی خبر آگئی کہ آپ کی آنکھوں میں بھی آنسو آجائیں گے

عیسیٰ کی اہلیہ ابتسام نے بتایا کہ وہ 10 اگست کے روز دبئی سے اوسلو گئے تھے۔ انہوں نے برٹش ائیرویز کیلئے ہی اپنی ٹکٹیں بک کروائی تھیں لیکن جب وہ ائیرپورٹ پر پہنچے توانہیں بتایا گیا کہ وہ قطر ائیرلائن کے ذریعے اوسلو سے لندن جائیں گے۔ ابتسام کا کہنا تھا کہ”یہ جان کر ہم سب کو شدید جھٹکا لگا۔ میں میرا شوہر، میرے دو بیٹے، دو بیٹیاں اور ایک بھانجا ہم سب ہی قطر ائیرویز کے جہاز میں سوار ہونے کیلئے تیار نہیں تھے۔ ہم نے فوری طور پر اوسلو میں متحدہ عرب امارات کے سفارتخانے سے رابطہ کیا۔ اگرچہ یہ ان کی چھٹی کا دن تھا لیکن اس کے باوجود انہوں نے ہمارے لئے فوری طور پر دوسری پرواز کی ٹکٹوں کا بندوبست کیا۔ برٹش ائیرویز کی اگلی پرواز 7گھنٹے بعد روانہ ہونی تھی لیکن ہم نے یہ تاخیر بھی برداشت کی تاکہ ہمیں قطر ائیرویز کے جہاز میں نہ بیٹھنا پڑے۔ ہم قطر کی حمایت نہیں کرتے اور اس کی کسی بھی کاروباری کمپنی کی خدمات لے کر انہیں فائدہ نہیں پہنچانا چاہتے۔ ہم سب سے کہیں گے کہ امارات سے محبت اور قطر کے خلاف اپنے جذبات کے اظہار کے لئے ایسا ہی کریں۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس