شامی صدر قاتلانہ حملے میں بال بال بچ گئے

شامی صدر قاتلانہ حملے میں بال بال بچ گئے
شامی صدر قاتلانہ حملے میں بال بال بچ گئے

  

دمشق(آئی این پی )شام کے صدر بشار الاسد دمشق میں قاتلانہ حملے میں بال بال بچ گئے۔

ریفرنڈم کے التوا کے لیے کردوں کو کوئی رعایت پیش نہیں کی :عراقی حکومت

غیر ملکی میڈیا کے مطابق دمشق میں ایک اجتماع سے خطاب کے بعد بشار الاسد نے جیسے ہی اپنی تقریر ختم کی تو اس عمارت کو ایک راکٹ سے نشانہ بنایا گیا جہاں ایک ٹریڈ فیئر منعقد کیا جا رہا تھا۔ سرکاری سطح پر اس حملے کی تصدیق تو کی گئی ہے لیکن ہلاکتوں کا ذکر نہیں کیا گیا ہے۔تاہم سیریئن آبزرویٹری فار ہیومن رائٹس نے بتایا ہے کہ اس کارروائی میں کم از کم 5 افراد مارے گئے ہیں۔واضح رہے کہ مذکورہ خطاب میں بشار الاسد نے مغربی ممالک کے ساتھ سیکیورٹی تعاون کو مسترد کردیا تھا۔انہوں نے کہا تھا کہ جب تک یہ ممالک شامی اپوزیشن اور باغی گروپوں کے ساتھ تعلقات منقطع نہیں کرتے ان سے تعاون ممکن نہیں ہے۔

مزید : بین الاقوامی