تمباکو نوشی کے خلاف موثر قانون سازی کرنا ہوگی،منیر ملک 

 تمباکو نوشی کے خلاف موثر قانون سازی کرنا ہوگی،منیر ملک 

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر) سوسائٹی برائے تحفظ حقوق اطفال (اسپارک) کے زیر اہتمام کراچی بار میں تمباکو نوشی کے خلاف آگہی مہم کے سلسلہ میں ایک سیمینار منعقد ہوا۔ جس میں بار کے صدر منیر ملک، سینئر وکلاء محمد علی بھٹی، ہارون پرساد، توقیر اے خان، کاشف بجیر، جمن بروڈو، منصور علی کورائی، سعید عباسی، جاوید سیلرو، ہریش کمار، عامر علی بھٹو، ظفر اقبال، احمد جسکانی، عبدالحلیم سومرو، پرشانت سوہنی ودیگر وکلاء نے اظہار خیال کیا۔ اسپارک کے منیجر محمد کاشف مرزا نے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ ہر سال ایک لاکھ ساٹھ ہزار افراد تمباکو نوشی کی وجہ ہلاک ہوجاتے ہیں جو لمحہ فکریہ ہے، شرکاء نے کہا کہ اس سلسلہ میں صوبوں کو موثر قانون سازی کرنا ہوگی اور اس پر سختی سے علمدرآمد کروانا ہوگا۔ شرکاء نے کہا کہ سگریٹ بیچنے والوں کیلئے لائسنس لازمی قرار دیا جائے۔ تمباکو مصنوعات پر ٹیکس میں اضافہ کیا جائے اور اس سلسلہ میں بھرپور آگہی مہم چلائی جائے اور عوامی شعور کو بیدار کیا جائے۔ کراچی بار اسپارک کی جدوجہد میں اس کے ساتھ ہے اور ہر طرح کا تعاون کرتا رہے گا۔ فیلڈ منیجر حارث جدون نے شرکاء کا شکریہ ادا کیا۔ 

مزید :

صفحہ آخر -