بلاول کا مرکز سے صوبائی سطح تک پارٹی کی تنظیم نو اور نئی سیاسی صف بندی کا فیصلہ

  بلاول کا مرکز سے صوبائی سطح تک پارٹی کی تنظیم نو اور نئی سیاسی صف بندی کا ...

  

  کراچی(این این آئی)چیئرمین پاکستان پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے مرکز سے صوبائی سطح تک پارٹی کی تنظیم نو اورنئی سیاسی صف بندی کا فیصلہ کرلیا ہے،بلدیاتی اداروں میں بیوروکریٹس، سیاسی اور سول سوسائٹی کے اچھی ساکھ کے حامل افراد کوایڈ منسٹر یٹرز مقررکرنیکا فیصلہ کرلیا گیا،کراچی سے تعلق رکھنے والی سول سوسائٹی کی کسی معروف شخصیت کو ایڈمنسٹریٹر بنانے پراتفاق ہوگیا،کراچی کے تمام اضلاع میں بھی پارٹی کی تنظیم نوکے لیے اہم فیصلے کرلیے گئے،بلاول بھٹونے کہاکہ کراچی کو وفاق کے حوالے کرنے کے خواب دیکھنے والے ہوش میں آئیں،پیپلزپارٹی اختیارات پر کوئی سمجھوتہ نہیں کرسکتی۔پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کی صدارت میں بلاول ہاس کراچی میں پارٹی کے اہم ترین مشاورتی اجلاس منعقد ہوئے۔چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کراچی آرگنائزیشن کمیٹی کے ارکان اور سندھ حکومت کے ذمہ داران سے ملاقات اورمشاورت کی،بلاول بھٹو کو کراچی آرگنائزیشن کمیٹی کے سربراہ وقار مہدی نے کراچی کی صورت حال پربریفنگ دی۔ اجلاس میں کراچی میں پی پی پی کی تنظیم نو کے حوالے سے بھی مشاورت کی گئی اوربلدیاتی اداروں کے خاتمے کے بعد کراچی میں ایڈمنسٹریٹرز کی تعیناتی کا معاملہ بھی زیرغور آیا۔اجلاس میں پی پی پی شعبہ خواتین کی مرکزی صدر فریال تالپور، پی پی پی سندھ کے صدر نثار کھوڑو،وزیراعلی سندھ سید مراد علی شاہ،سابق وزیراعلی سندھ سید قائم علی شاہ، سعید غنی، تاج حیدر، راشد ربانی، نجمی عالم،صوبائی وزیرناصر شاہ، لعل بخش بھٹو، دیگرشریک ہوئے۔چیئرمین پاکستان پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے پارٹی کی تنظیم نوسے متعلق اہم فیصلے کیے ہیں،  ذرایع کا کہنا ہے کہ پاکستان پیپلز پارٹی کی تنظیم نو کا فیصلہ کیا گیا ہے، پیپلز پارٹی اور پیپلز پارٹی پارلیمنٹیرینز کی تنظیم نو مرحلہ وار ہوگی۔پہلے مرحلے میں مرکز اور پنجاب کی سطح پر تنظیم نو ہوگی،پیپلز پارٹی اور پارلیمنٹیرینز کے مرکزی عہدوں پر اہم تبدیلیوں کا امکان ہے، پارٹی کے نائب صدر اور سیکریٹری جنرل،پیپلز پارٹی شمالی پنجاب کے صدر سمیت اہم عہدوں کے لیے نئے نام طلب کیے گئے ہیں اورپارٹی کی سیاسی صف بندی کے لیے تحریری طور پر تجاویز مانگی ہیں۔ بلوچستان اور خیبر پختونخوا میں پارٹی کی تنظیم نو دوسرے مرحلے میں ہوگی اسی طرح سندھ، آزاد کشمیر، گلگت بلتستان کی تنظیم نو کا فیصلہ بعد میں ہوگا،قیادت کی جانب سے پارٹی کی مجلس عاملہ کے ارکان کو نئے نام اور سفارشات تیار کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔مختلف پارٹی عہدوں پر تبدیلیوں کے لیے سفارشات بلاول بھٹو اور آصف زرداری کو ارسال کی جائیں گی، حتمی فیصلہ دونوں رہنماں کی منظوری کے بعد ہوگا۔چیئرمین پیپلزپارٹی نے پارٹی کی کراچی کی تنظیم نوکے لیے بھی مشاورت کی ہے اورپارٹی رہنماں سے تجاویز طلب کرلی ہیں۔علاوہ ازیں اجلاس میں سرکاری افسران یا سول سوسائٹی کے افراد میں سے ایڈمنسٹریٹرز کی تعیناتی کے آپشنز پر یہ فیصلہ کیا گیا کہ ایڈمنسٹریٹرز چاہے سرکاری افسران ہوں یا سول سوسائٹی کے افراد، اچھی ساکھ کے حامل افراد کوہی بلدیاتی اداروں میں ایڈمنسٹریٹرمقررکیا جائے گا ۔

بلاول

مزید :

صفحہ اول -