ٹیلی نار،نیشنل ہائی وے اور موٹر وے پولیس نظام کی بہتری کیلئے خواہاں 

  ٹیلی نار،نیشنل ہائی وے اور موٹر وے پولیس نظام کی بہتری کیلئے خواہاں 

  

لاہور (پ ر)ٹیلی نار پاکستان  اور نیشنل ہائی وے اور موٹر وے پولیس ٹیکنالوجی کے ذریعے بہتر حفاظت اور عوام تک اس کے فوائد پہنچانے کے خواہش مند ہیں ۔اس سلسلے میں ٹیلی نار کے سی ای او  عرفان  وہاب خان  نے  آئی جی، نیشنل ہائی وے اور موٹر وے پولیس، ڈاکٹر سید کلیم امام کی سربراہی میں نیشنل ہائی وے اور موٹر وے پولیس کی جانب سے منعقدہ  ویبینارمیں نیشنل ہائی وے اور موٹر وے پولیس کے اعلٰی افسران سے خطاب کیا۔ سیشن میں معمولات زندگی کو بہتر بنانے کے لیے کئی نئی اور آنے والی ٹیکنالوجی پر خصوصی بات کی گئی کہ یہ جدید طریقے ہمارے معاملات کو کیسے بہتر بنا سکتے ہیں۔ گزشتہ کچھ سالوں میں دنیا  بھر میں نظام چلانے والے اداروں بشمول قانون نافذ کرنے والے اداروں نے  ڈیجیٹل ترقی کو بھرپور انداز میں اپنایا ہے، پاکستان میں بھی ڈیجیٹل خواندگی کی شرح میں اضافہ ہو رہا ہے اور اب نظام کی بہتری  اور اس میں شفافیت کے لیے ٹیکنالوجی کے استعمال کی ضرورت ہے۔ ٹیلی نار کے سی ای او  عرفان  وہاب خان  نے کہا کہ پاکستان میں ڈیجیٹل ترقی کا سفر اس صدی کے آغاز سے جاری ہے اور اب  79 فیصد سے زائد موبائل صارفین کے ساتھ پاکستان  اگلے  مرحلہ میں داخل ہونے کے لیے تیار ہے۔ ٹیکنالوجی ترقی کی راہ میں سب سے بڑی پیش رفت ہے اور جس رفتار سے یہ آگے  برھ  رہی ہے، صارفین کو خدمات فراہم کرنے والے اداروں کو ٹیکنالوجی کو اپنانا  چاہیے  تاکہ اس سے مستفید ہو سکیں۔ ٹیلی نارکارکردگی اور ہمارے شراکت دارں کی قابلیت کو بہتر بنانے کے لیے نئی ٹیکنالوجیز پر پہلے سے کام کر چکا ہے۔  

 عرفان  وہاب خان نے  ٹیکنالوجی  کے  ذریعے نظام کو بہتر بنانے کے لیے بات کرنے کا موقع فراہم کرنے پر نیشنل ہائی وے اور موٹر وے پولیس کا بھی شکریہ ادا کیا۔

سیشن کے دوران سوشل میڈیا کے استعمال،    artificial intelligence, facial recognition, big data and analytics, internet of things  اور  e-payments پرتبادلہ خیال کیا گیا تاکہ پبلک اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے مابین خلا کوکم کیا جا سکے اور کراؤڈ سورسنگ، نقل و حرکت کے تجزیات، حفاظتی نگرانی، ٹریفک مینجمنٹ کے لئے سینسر ڈیٹا اکٹھا کرنا، وسائل کے موثر استعمال، ٹریفک کا بہاؤو نگرانی اور جرائم کی روک تھام کے قابل بنایا جا سکے۔

  اس موقع پر آئی جی، نیشنل ہائی وے اور موٹر وے پولیس، ڈاکٹر سید کلیم امام نے کہا، ''  نظام میں شفافیت اور بہتر صلاحیتوں کی ضرورت پر ہماری بڑھتی ہوئی توجہ کے ساتھ، ہمیں یقین ہے کہ نئی ٹیکنالوجیز کا تعارف یقینی طور پر نظام چلانے کو بہتر بنا سکتا ہے۔  ہم اپنے وژن کے مطابق عوام کی بہتر خدمت کرنے کے لئے ان ٹیکنالوجیز کے استعمال کو اپنانے کے لئے خواہش مند ہیں اور ٹیلی نار پاکستان جیسے جدیدادارے کے ساتھ مل کر کام کرنا ہمیں اپنے مقاصد کے قریب تر پہنچائے گا۔میں عرفان وہاب خان صاحب کا این ایچ اینڈ ایم پی سے متعلق مختلف تکنیکی سلسلوں پر مکمل اور بصیرت انگیز مباحثے کے لئے شکریہ ادا کرنا چاہتا ہوں جس سے بہتر اثرات مرتب ہوں گے۔

ٹیکنالوجی بطور معاشرہ رابطہ کرنے کے طریقہ کار کو بدل رہی ہے اور جیسے ہی معاشرہ  بدلتا ہے  اسی طرح طور طریقے،تیکنیک اور نظام بھی بدلیں گے جو پولیس فورسز اور دیگر انتظامی ادارے ضروریات کے مطابق بروئے کار لا سکتے ہیں۔

مزید :

کامرس -