محرم الحرام، آرپی او، سی پی او اورڈپٹی کمشنر کے دورے،سکیورٹی انتظامات کاجائزہ

  محرم الحرام، آرپی او، سی پی او اورڈپٹی کمشنر کے دورے،سکیورٹی انتظامات ...

  

 ملتان (سٹی رپورٹر، وقائع نگار)نواسۂ رسولؐ، مظلوم کربلاء حضرت امام حسینؓ اور ان کے رفقاء کی یاد میں محرم الحرام کے شروع ہوتے ہی ماتمی جلوسوں اور مجالس عزاء کا آغاز ہو گیا ہے۔ ضلع ملتان میں یکم محرم الحرام سے یوم عاشور تک کل 486 ماتمی جلوس برآمد کئے جائیں گے اور 1663 مجالس عزاء برپاء کی جائیں گی۔ جلوسوں میں 248 لائسنسی اور 238 روائتی ماتمی جلوس شامل ہوں گے۔ جلوسوں میں سے 105 جبکہ مجالس عزاء میں سے 441 کو حساس قرار دیا گیا ہے۔ گزشتہ شب ضلع ملتان کے مختلف علاقوں میں 4 روائتی ماتمی جلوس نکالے گئے اور 150 مجالس عزاء کا اہتمام(بقیہ نمبر41صفحہ7پر)

 کیا گیا۔ ضلع ملتان میں نکالے جانے والے 4 روائتی ماتمی جلوسوں کو پولیس کی جانب سے حساس قرار دیا گیا تھا، محلہ ٹبی شیر خان، صدر کے علاقہ میں امام بارگاہ مقیم شاہ، آستانہ شیر شاہ اور ٹمبر مارکیٹ میں بھی ماتمی جلوس نکالے گئے۔ دریں اثناء گزشتہ روز ضلع بھر میں منعقد ہونے والی 150 مجالس عزاء میں سے 45 کو حساس قرار دیا گیا تھا۔ علاوہ ازیں آج ضلع بھر میں 4 ماتمی جلوس نکالے جائیں گے جن میں سے 3 روائتی اور ایک لائسنسی جلوس شامل ہو گا۔ آج ضلع بھر میں 152 مجالس عزاء ہوں گی جن میں سے 45 کو حساس قرار دیا گیا ہے۔ ملتان کا پہلا لائسنسی ماتمی جلوس شام 6 بجے امام بار گاہ شاہ مہنگر اندرون بوہڑ گیٹ سے برآمد ہو گا جو بوہڑ گیٹ النگ، حرم گیٹ النگ اور نشاط روڈ  سے ہوتا ہوارات گئے آستانہ کمتر پر اختتام ٖپذیر ہو گا۔ دریں اثناء ضلعی انتظامیہ کی جانب سے ماتمی جلوسوں اور مجالس کے موقع پر سکیورٹی کے سخت انتظامات کئے جا رہے ہیں۔ ماتمی جلوسوں کے داخلی و خارجی راستوں کو مکمل طور پر بند کیا جا رہا ہے جبکہ مجالس اور جلوسوں میں داخل ہونے والوں کی پولیس اور رضاکاروں کی جانب سے جامع تلاشی لی جا رہی ہے جبکہ ریجنل پولیس آفیسر ملتان وسیم احمد خان نے گزشتہ روز یکم محرم الحرام کے موقع پر شہر کے حساس علاقوں میں محرم ڈیوٹی کی انسپکشن کی اور سکیورٹی انتظامات کا جائزہ لیا۔اس موقع پر آر پی او کے ہمراہ امن کمیٹی کے ارکان شفقت بھٹہ اور جلوس منتظمین بھی تھے۔آر پی او وسیم احمد۔خان نے ممتاز آباد اور دولت گیٹ کے علاقوں میں جلوس کے روٹس کا بھی معائنہ کیا اور پولیس حکام سے بریفننگ لی۔اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے وسیم احمد خان کا کہنا تھا کہ کرونا کے خلاف جنگ میں پولیس کے لازوال کردار کے بعد  محرم الحرام میں عزادوں کیلئے فول پروف سکیورٹی کا چیلنج بھی ہر صورت پورا کیا جائے گا اس سلسلے میں ملتان ریجن کے 14 ہزار سے زائد پولیس اہلکار اور افسران ڈیوٹی سرانجام دینگے۔آر پی او کا کہنا تھا کہ سول سوسائٹی اور امن کمیٹی کی ہر ضلع میں پولیس کو مکمل حمایت اور تعاون حاصل ہے تمام جلوسوں اور مجالس کے مقامات سمیت عبادت گاہوں پر بھرپور سکریننگ کی جائے گی تاکہ کوئی ناخوشگوار واقعہ رونما نہ ہوسکے۔وسیم احمد خان نے اس موقع پر ضلعی پولیس حکام کو ہدایت کی کہ ڈیوٹی پر موجود پولیس فورس کے کھانے پینے اور دیگر سہولیات کا خاص خیال رکھا جائے تاکہ انکا مورال بلند کیا جاسکے۔بعد ازاں ریجنل پولیس آفیسر نے امن کمیٹی کے ارکان کے ہمراہ جلوس کے روٹس پر انتظامات کا جائزہ لیا اور پولیس جوانوں سے ملاقات بھی کی ادھرسٹی پولیس آفیسر ملتان محمد حسن رضا خان اور ڈپٹی کمشنر ملتان محمد عامر خٹک نے محرم الحرام کے سلسلے دربار یوسف شاہ گردیز اور دربار شاہ شمس کا وزٹ کیا۔سی پی او ملتان اور ڈپٹی کمشنر ملتان نے دربار یوسف شاہ گردیز اور دربار شاہ شمس کے سیکیورٹی و دیگر انتظامات کا جائزہ لیا۔ انہوں نے منتظمین سے ملاقات کی جنہوں نے تمام تر انتظامات پر اطمینان کا اظہار کیا۔ سی پی او ملتان نے کہا کہ محرم الحرام کے دوران فول پروف سکیورٹی کو یقینی بنایا جائے گا۔انہوں نے پولیس افسران کو ہدایت کی کہ اس موقع پر الرٹ ہو کر ڈیوٹی سر انجام دیں۔روف ٹاپ ڈیوٹی مکمل ہو۔انہوں نے پولیس افسران کو ہدایت کی کہ تلاشی کے بغیر کسی شخص کو مجالس اور جلوسوں میں نہ جانے دیا جائے۔سی پی او ملتان نے کہا کہ امن برقرار رکھنے کے لئے شہری اور جلوسوں کے منتظمین بھی اپنا کردار ادا کریں۔ڈپٹی کمشنر ملتان نے کہا ہے کہ عاشورہ محرم کے دوران مثالی انتظامات کے لئے پلان پر عمل جاری ہے.انہوں نے کہا عزاداری کے جلوسوں کے روٹس پرمرمت کے کام کی کوالٹی پر سمحھوتہ نہیں کیا جائے گا.انہوں نے کہا میپکو حکام کو عاشورہ کے دوران لوڈشیڈنگ نہ کرنیکی ہدایات دی گئی ہیں.ڈپٹی کمشنر نے کہا ہے روشنی کا مکمل انتظامات کیے گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ریسکیو اور محکمہ صحت کی ٹیمیں بھی الرٹ ہیں۔

حسن رضا خان

مزید :

ملتان صفحہ آخر -