صوابی،جادو منتر کے عوض 30 ہزارلینے والا جعلی عامل گرفتار

  صوابی،جادو منتر کے عوض 30 ہزارلینے والا جعلی عامل گرفتار

  

صوابی (بیورورپورٹ) زیدہ پولیس نے نیدر لینڈ میں مقیم پاکستانی خاتون سے جادو منتر و تعویز کے عوض تیس ہزار روپے لینے والے جعلی عامل کو گرفتار کر لیا۔ پولیس تھانہ زیدہ کی رپورٹ کے مطابق ایک پاکستانی خاتون مسماۃ بانو نے آئی جی پی خیبر پختونخوا کو ایک تحریری درخواست میں شکایت کی تھی کہ ایک عامل شیر غنی ولد محمد غنی سکنہ مرغز اکا خیل جو صوابی میں رہتا ہے مجھے اسکا نمبر یوٹیوب سے ملا یہ یوٹیوب پر جادو ٹونے  کی ویڈیوز بنا تا ہے میری اس سے بات اللہ کے گھر میں ہوئی جب وہ وہ عمرہ کررہے تھے اس نے کہا کہ پاکستان آکر میں آپ کا کام کرونگا مجھے کچھ گھریلو پریشانی تھی عامل نے کہا کہ مجھے تیس ہزار روپے بھیج دو پھر بات کرونگا۔ میں نے مذکورہ عامل شیر غنی کو نیدر لینڈ سے ویسٹرن یونین صوابی برانچ کے ذریعے پیسے بھیج دیئے۔ پیسے لینے کے بعد اس کا رویہ بدل گیا۔ فون نہیں اُٹھاتے جب کہ میسج کا جواب دو دن بعد دیتے اور کوئی صحیح بات نہیں کر تا۔ جب میں نے رو رو کر ان سے کہا کہ بھائی آپ نے مجھے تنگ کر دیا ہے آپ کے پاس میرے لئے ٹائم نہیں تو کیوں آپ نے میرا کام کرنے کا کیوں کہا اس پر اس نے مجھ سے جھگڑا کیا اور دھوکہ دہی سے مجھ سے ہتھیا کر کہا کہ تیس ہزار میں تم نے مجھے خریدا نہیں ہے۔ اس نے مجھے بتایا کہ تعویز اپنے پاس رکھو میں آپ کا نمبر بلاک کر رہا ہوں انہوں نے کہا کہ عامل نے نہ پیسے واپس کئے نہ ہی بات کر رہا ہے لہٰذا آئی جی پی سے گزارش ہے کہ میں ایک محنت کش عورت ہوں مشکل سے تیس ہزار روپے اکٹھے کر کے ان کو دیئے۔ میرا کام نہیں ہوا اس لئے میرے پیسے ان سے واپس دلوائیں۔ اس درخواست پر ڈی پی او صوابی عمران شاہد نے تھانہ زیدہ کو جعلی عامل کی گرفتاری اور رقم کی برآمدگی کے لئے احکامات جاری کر دیئے جس پر زیدہ پولیس نے مذکورہ عامل کو گرفتار کر کے ان کے قبضے سے مبلغ تیس ہزار روپے بر آمد کر کے ان کے خلاف ایف آئی آر درج کر کے تفتیش شروع کر دی۔   

مزید :

پشاورصفحہ آخر -