میر حاصل بزنجو کی نماز جنازہ ادا، والد کے پہلو میں سپرد خاک، سینیٹ، قومی اسمبلی میں فاتحہ خوانی، تعزیتی قرار داد منظور

  میر حاصل بزنجو کی نماز جنازہ ادا، والد کے پہلو میں سپرد خاک، سینیٹ، قومی ...

  

 خضداراسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) نیشنل پارٹی کے مرکزی رہنما، بزرگ سیاستدان میر حاصل خان بزنجو کی نماز جنازہ اداکرنے کے بعد  والد کے پہلو میں سپرد خاک کر دیا گیا۔میر حاصل بزنجو کی نماز جنازہ جمعیت علمائے اسلام (ف) کے مرکزی رہنما مولانا قمر الدین نے پڑھائی۔ نماز جنازہ میں صوبائی وزرا، سابق وزیراعلیٰ، اراکین قومی اسمبلی، سینیٹرز اور ایم پی ایز نے شرکت کی۔نماز جنازہ میں علمائے کرام، مختلف سیاسی جماعتوں کے عہدیداروں اور قبائلی عمائدین سمیت عوام کی بڑی تعداد بھی شریک ہوئی۔ دریں اثناء سینیٹ اور قومی اسمبلی میں سربراہ نیشنل پارٹی میر حاصل بزنجو کو خراج عقیدت پیش کیا گیا اور فاتحہ خوانی کی گئی۔ مسلم لیگ نون کے رہنما خواجہ آصف نے قومی اسمبلی میں کہا کہ میر حاصل بزنجو کے ساتھ قریبی تعلق تھا، حاصل بزنجو نے ساری عمر جمہوریت کیلئے جدوجہد کی، میر حاصل بزنجو عدم تشدد، معتدل مزاج کے رہنما تھے، حاصل بزنجو کی خدمات کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں، ان کے احترام اور ان کی یاد میں قومی اسمبلی کا اجلاس ملتوی کر دیں۔ پیپلزپارٹی کی رہنما شیری رحمان نے سینیٹ میں کہا کہ میر حاصل بزنجو  جمہوریت کی کشتی میں رہے، میر حاصل بزنجو مستقل مزاج اور حق کی بات کرتے تھے،حاصل بزنجو آخری دم تک اپنی سوچ اور نظریے پر قائم رہے۔ جبکہ سینیٹ نے میر حاصل بزنجو کے انتقال پر تعزیتی قرارداد کی منظوری دیدی۔ اجلاس میں قائد حزب اختلاف راجہ ظفر الحق نے قرارداد پیش کی۔ قرارداد میں کہا گیا کہ یہ ایوان سینیٹر حاصل بزنجو کے انتقال پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کرتا ہے، وہ ایک حقیقی جمہوریت پسند رہنما، مدبر سیاستدان اور جرا ت مند رہنما تھے۔ چیئرمین سینیٹ نے قرارداد ایوان میں منظوری کے لئے پیش کی جس کی ایوان نے اتفاق رائے سے منظوری دیدی۔ 

حاصل

مزید :

صفحہ اول -