پاکستان میں کورونا ویکسین 6سے 8مہینے میں دستیاب ہو گی: ڈاکٹر عطا الرحمان 

پاکستان میں کورونا ویکسین 6سے 8مہینے میں دستیاب ہو گی: ڈاکٹر عطا الرحمان 

  

  لاہور(آن لائن)سربراہ کورونا ٹاسک فورس ڈاکٹر عطا ء الرحمان نے کہا ہے کہ پاکستان میں ویکسین 6 سے 8 مہینے میں دستیاب ہوگی، پاکستان میں دو چینی کمپنیاں جلد انسانوں پرٹرائل شروع کررہی ہیں  ان ویکسین کے ٹرائل کے نتائج کیلئے مزیدتین مہینے انتظار کرنا پڑے گا، دسمبرمیں ٹرائلزکے نتائج آئیں گے اس کے بعد ویکسین کے کامیاب ٹرائل بارے کچھ کہا جاسکتا ہے اس حوالے سے سربراہ کورونا ٹاسک فورس نے نجی ٹی وی کو بتایا کہ دنیا میں 150کمپنیاں ویکسین بنا رہی ہیں ان میں 50 ایسی کمپنیاں ہیں جن کی ویکسین کے کلینیکل ٹرائل کا مرحلہ جاری ہے، کورونا کی ساخت کو دیکھ کر ویکسین بنانے کے مختلف طریقے ہیں پاکستان میں ابھی تک کسی بھی شہر میں ٹرائل شروع نہیں ہوئے  ٹرائل جلد شروع ہونے جا رہے ہیں انہوں نے کہا کہ کورونا کا اب بھی بڑا خطرہ ہے، کورونا اپنی شکل تبدیل کررہا ہے، کراچی یوینورسٹی میں اس کی ساخت پر ریسرچ کی گئی ہے تو پتا چلا ہے کہ کورونا وائرس ہر دو تین ہفتے بعد اپنی شکل تبدیل کررہا ہے انہوں نے کہا کہ پچھلے ہفتوں میں کیسز کم تھے لیکن اب تعداد بڑھ کر واپس 600 یا 700 تک ہوچکی ہے۔کورونا وائرس کی دوسری لہر پہلے کی نسبت خطرناک ہوتی ہے، کیونکہ وائرس اپنی شکل تبدیل کرچکا ہوتا ہے۔

 ڈاکٹر عطاء الرحمن

مزید :

صفحہ اول -