اب کالج میں داخلہ کے لیے بھی میڈیکل ٹیسٹ لازمی قرار لیکن کس بات کی جانچ پڑتال کی جائے گی؟ والدین کیلئے خوشی کی خبرآگئی

اب کالج میں داخلہ کے لیے بھی میڈیکل ٹیسٹ لازمی قرار لیکن کس بات کی جانچ پڑتال ...
اب کالج میں داخلہ کے لیے بھی میڈیکل ٹیسٹ لازمی قرار لیکن کس بات کی جانچ پڑتال کی جائے گی؟ والدین کیلئے خوشی کی خبرآگئی

  

لاہور(جنرل رپورٹر)سگریٹ نوشی کرنے والے طلبا کو کسی کالج میں داخلہ نہیں ملے گا۔ فرسٹ ایئر میں داخلہ لینے کے لیے ہیلتھ پرفارمہ مکمل کروانا لازمی ہوگا۔ذرائع کے مطابق پرفرامہ میں جنرل ہیلتھ پروفائل کو مکمل کرنے کیلئے کالج اور طالب علم کا نام شامل ہوگا۔ پرفارمہ میں پارٹ اے، بی، سی، ڈی اور ای کو مکمل کرنا لازمی ہے۔

روزنامہ پاکستان کے مطابق ماہر نفسیات طالب علم کی جسمانی صحت چیک کر کے اجازت نامہ جاری کرے گا۔ کسی صورت اگر شک پڑتا ہے کہ طالب علم نشے کا عادی ہے تو ماہر نفسیات اس کے یورن اور بلڈ ٹیسٹ تجویز کرے گا۔ہائی کی کورٹ کی ہدایات پر ڈی پی آئی کالجز نے سمری پر دستخط کرکے محکمہ ہائر ایجوکیشن کو ارسال کر دی ہے اور یہ امید کی جا رہی ہے رواں سے ہونے والے فرسٹ ایئر کے داخلوں میں یہ قانون لاگو ہوگا۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -