کشمیر میں پائیدار امن کیلئے علاقے کی خصوصی حیثیت بحال کرنا ہوگی:محبوبہ مفتی

کشمیر میں پائیدار امن کیلئے علاقے کی خصوصی حیثیت بحال کرنا ہوگی:محبوبہ مفتی

  

 سرینگر(این این آئی)غیر قانونی طور پر بھارت کے زیر قبضہ جموں و کشمیر میں پیپلز ڈیمو کریٹک پارٹی (پی ڈی پی) کی سربراہ محبوبہ مفتی نے کہا ہے کہ اگر بھارت کوجموں وکشمیر اور برصغیر میں امن قائم کرنے میں واقعی دلچسپی ہے تواسے دفعہ 370 کو بحال کرنا ہوگا اور تنازعہ کشمیرکو مذاکرات کے ذریعے حل کرنا ہوگا کشمیر میڈیا سروس کے مطابق محبوبہ مفتی نے کلگام میں ایک اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ کشمیر میں پائیدارامن کے لئے بھارتی حکومت کو علاقے کی خصوصی حیثیت بحال کرنا ہوگی جس کواس نے5 اگست 2019 کو غیر قانونی طور پر چھین لیا تھااور مذاکرات کے ذریعے تنازعہ کشمیر کو حل کرنا ہوگا پی ڈی پی کی سربراہ نے کہا کہ اگر 1947 میں بی جے پی اقتدار میں ہوتی تو مقبوضہ جموں وکشمیر آج بھارت کا حصہ نہ ہوتا انہوں نے کہاکہ بی جے پی کشمیر میں اختلاف رائے کو کچلنے کے لئے بھارتی ایجنسیوں کا غلط استعمال کررہی ہے پی ڈی پی سربراہ نے کہا کہ اگر بی جے پی نے ہوش کے ناخن نہ لئے تو بھارت کو فرقہ وارانہ اور مذہبی بنیادوں پرتقسیم ہونے سے کوئی نہیں روک سکتا۔ پی ڈی پی کی سربراہ نے طالبان کے بارے میں تبصرہ کرتے ہوئے کہاکہ طالبان نے امریکی فورسز کو افغانستان سے بھگا دیالیکن پوری دنیا طالبان کے رویے پر نظررکھے ہوئے ہے انہوں نے کہاکہ میں طالبان پر زور دیتی ہوں کہ وہ کوئی ایسا کام نہ کریں جو دنیا کو ان کے خلاف جانے پر مجبورکرے۔ انہوں نے کہا کہ طالبان میں بندوق کا کردار ختم ہو چکا ہے اور عالمی برادری یہ دیکھ رہی ہے کہ وہ لوگوں کے ساتھ کیسا سلوک کرتے ہیں۔ 

محبوبہ مفتی 

مزید :

علاقائی -