اللہ اللہ ہو اللہ

اللہ اللہ ہو اللہ

اللہ اللہ ہُو اللہ

اول آخر تُو اللہ

بجلی، تارے، سورج، چاند

نور ترا ہر سُو اللہ

جھوٹے ناتے ٹوٹ گئے

صرف مرا ہے تُو اللہ

پھول پھول کے دامن میں

تیری ہے خوش بو اللہ

تُو چاہے تو ابر بنے

صحراؤں کی لو اللہ

آگ کو جو گلزار کرے

دے مجھ کو وہ خو اللہ

تیری یاد کے جلوؤں سے

چمکا ہر آنسو اللہ

راسخ کا ہے ورد یہی

دَم دَم میں ہے ہُو اللہ

(راسخ عرفانی ؒ )

مزید : ایڈیشن 1