جنوری میں سینیٹ کے الیکشن کراوانے کا کوئی آئینی جواز نہیں : کنور دلشاد

جنوری میں سینیٹ کے الیکشن کراوانے کا کوئی آئینی جواز نہیں : کنور دلشاد
 جنوری میں سینیٹ کے الیکشن کراوانے کا کوئی آئینی جواز نہیں : کنور دلشاد

  

اسلام آباد (آئی این پی) سابق وفاقی سیکر ٹری الیکشن کمیشن و چیئرمین نیشنل ڈیموکریٹک فاؤ نڈیشن کنور محمد دلشاد نے کہا ہے کہ موجودہ حالات کے تناظر میں نواز شریف قومی اسمبلی کو مزید چلانے کے متحمل نہیں اگرسینیٹ الیکشن مارچ کے پہلے ہفتے میں ہوئے تو مارچ کے آخر تک حکمران جماعت کی جانب سے قومی اسمبلی تحلیل کر دی جائے گی ، آئین کے آرٹیکل 224کے تحت الیکشن کمیشن آف پاکستان اپنی سابقہ روایات کے مطابق 12فروری کو الیکشن شیڈول جاری کرنے کا مجاز ہے لہذاٰ جنوری میں سینیٹ کے الیکشن کروانے کا کوئی آئینی جواز نہیں ،ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعرات کے روز نیشنل ڈیموکریٹک فاؤ نڈیشن کے مرکزی آفس اسلام آباد میں موجودہ سیاسی حالات پر منعقدہ مذاکرے کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کیا ،مذاکرے میں صدر نیشنل ڈیموکریٹک فاؤنڈیشن سہیل کسٹ ،ٹیکنکل ایڈوائزر نیشنل ڈیموکریٹک فاؤنڈیشن ڈاکٹر چوہدری عنایت ،لیگل ایڈوائزر ر نیشنل ڈیموکریٹک فاؤنڈیشن سید سفیر حسین شاہ کے علاوہ جمہوری اقدار کے فروغ کے لئے کوشاں این جی اوز اور سول سوسائٹی کے نمائندگان نے بھی شرکت کی،کنور محمد دلشاد نے کہا کہ آئین کے آرٹیکل 224کے تحت الیکشن کمیشن آف پاکستان اپنی سابقہ روایات کے مطابق 12فروری کو الیکشن شیڈول جاری کرنے کا مجاز ہے جس کے نتیجہ میں سینیٹ الیکشن 5مارچ سے پہلے ہو جائیں گے،انہوں نے اپنا تجزیہ دیتے ہوئے کہا کہ سینیٹ کی 52نشستوں پر الیکشن ہونے ہیں جس میں ہر صوبے کی 12نشستیں ہیں ،پنجاب میں مسلم لیگ ن کی اکثریت ہے لہذاٰ یہاں سے10،خیبر پختونخواہ سے 2جبکہ بلوچستان سے بھی 2یا3نشستیں حاصل کرنے میں کامیاب ہو جائے گی اور اس طرح ن لیگ کے سینیٹرز کی کل تعداد 45ہو جائے گی ، سہیل کسٹ نے مذاکرے کے اختتام پر نیشنل ڈیموکریٹک فاؤنڈیشن کی جانب سے خصوصی رپورٹ جاری کرتے ہوئے کہا کہ آئینی طور پر موجودہ قومی اسمبلی 31مئی اور صوبائی اسمبلیاں 28مئی کو تحلیل ہو جائیں گی،رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ آئین کے آرٹیکل 224کے مطابق 60دن میں انتخابات ہونگے اور اسی آرٹیکل کے تحت نگران حکومت تشکیل دی جائے گی لہذاٰ 10جون تک الیکشن شیڈول جاری ہوگا اور قومی انتخابات 25سے 28جولائی کے درمیان ہونگے۔ ڈاکٹرچوہدری عنایت نے کہا کہ اس وقت پاکستان میں کئی انٹر نیشنل این جی اوز قومی مفادات کے بر عکس کام کررہی ہیں ،چیئرمین نیب ایسی تمام انٹرنیشنل این جی اوز کے خلاف از خود نوٹس لیں اور فی الفور کاروائی کا آغاز کریں۔سید سفیر حسین شاہ نے کہا کہ ایسی تمام آئی این جی اوز کے خلاف ہاء کورٹ میں کیس دائر کریں گے اور جلد وائٹ پیپر بھی جاری کریں گے۔

کنور دلشاد

مزید : صفحہ اول